Tuesday , July 25 2017
Home / ہندوستان / کسان قرض معافی،ریاستیں بوجھ برداشت کریں

کسان قرض معافی،ریاستیں بوجھ برداشت کریں

مرکز سے کوئی تعاون نہیں کیا جائیگا ۔ وزیر فینانس ارون جیٹلی کا بیان
نئی دہلی 12 جون ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیر فینانس ارون جیٹلی نے آج کہا کہ ریاستوں کی جانب سے کسانوں کے قرض معاف کرنے کے اخراجات میں مرکزی حکومت کوئی حصہ ادا نہیں کریگی اور ریاستوں کو ہی یہ اخراجات برداشت کرنے ہونگے ۔ یہ اعلان اس تناظر میں اہمیت کا حامل ہے کیونکہ مہاراشٹرا حکومت کی جانب سے کل ہی احکام جاری کرتے ہوئے کسانوں کے قرض معاف کرنے کا اعلان کیا گیا ہے ۔ علاوہ ازیں مدھیہ پردیش میں بھی کسانوں نے اسی مطالبہ پر گذشتہ دنوں پرتشدد احتجاج کیا تھا ۔ اترپردیش جاریہ سال وہ پہلی ریاست رہی جس نے چھوٹے اور اوسط درجہ کے کسانوں کے قرض معاف کرنے کا اعلان کیا تھا جس کی جملہ رقم 36,359 کروڑ روپئے تھے ۔ مسٹر ارون جیٹلی نے نامہ نگاروں کے سوالات کے جواب دیتے ہوئے یہ واضح کیا کہ ایسی اسکیمات کیلئے مرکزی حکومت کی جانب سے کوئی فنڈز فراہم نہیں کئے جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ یہ بات پہلے ہی کہہ چکے ہیں کہ جو ریاستیں کسانوں کے قرض معاف کرنا چاہتی ہیں انہیں اس کے وسائل اپنے طور پر مجتمع کرنے ہونگے اور مرکزی حکومت کو اس میں مزید کچھ کہنے کی ضرورت نہیں ہے ۔ جاریہ سال پیداوار میں زبردست اضافہ کے باوجود کسان پریشان ہیں کیونکہ زرعی اشیا کی قیمتوں میں کمی آئی ہے ۔

 

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT