Saturday , August 19 2017
Home / Top Stories / کشمیر تشدد میں ملوث افراد سے کوئی سمجھوتہ نہیں

کشمیر تشدد میں ملوث افراد سے کوئی سمجھوتہ نہیں

ریاست کی ترقی مرکزی حکومت کی اولین ترجیح : ارون جیٹلی کا بیان
جموں ۔ /21 اگست (سیاست ڈاٹ کام) وادی کشمیر میں جاری بدامنی اور بے چینی کی فضاء کے حوالے سے مرکزی حکومت نے آج اس بات کے لئے اپنی ترجیحات کا اعلان کیا ہے ۔ حکومت نے زور دے کر کہا کہ وہ ان لوگوں سے ہرگز سمجھوتہ نہیں کرے گی جو کشمیر تشدد میں ملوث ہیں ۔ ریاست جموں و کشمیر کو گزشتہ 60 سال سے یکسر نظر انداز کردیا جاتا رہا ہے ۔ اب مرکز نے ریاست کی ترقی کا بیڑہ اٹھایا ہے تو ریاست میں تشدد پھیلانے والوں کو ہرگز بخشا نہیں جائے گا ۔ وادی کشمیر میں ابتر صورتحال کا اعتراف کرتے ہوئے مرکزی وزیر ارون جیٹلی نے کہا کہ یہ سنگین مسئلہ ہے جو لوگ کشمیر میں سنگ باری میں ملوث ہیں وہ ستیہ گرہ نہیں کررہے ہیں بلکہ جارحیت پسندی پر اتر آئے ہیں ۔ یہ لوگ پولیس اور سکیورٹی فورسیس کے ساتھ متصادم ہیں لیکن بعض افراد تنگ نظری کی وجہ سے یہ سب کچھ نہیں دیکھ پارہے ہیں ۔ جموں شہر کے مضافات میں ایک ریالی سے خطاب کرتے ہوئے ارون جیٹلی نے کشمیر کی موجودہ صورتحال کیلئے پاکستان کو ذمہ دار ٹھہرایا اور کہا کہ وہ ہی ہندوستان کے اٹوٹ حصہ پر حملہ کررہا ہے ۔ اس نے حملے کرنے کے نئے طریقے ایجاد کرلئے ہیں ۔ ریاستی عوام کو حکمراں طبقہ کے ساتھ جنگ کرنے کے لئے اکسایا جارہا ہے ۔  1947 ء کے بعد سے یہاں گڑبڑھ ہی دیکھی جاتی رہی ہے ۔ وزیر فینانس نے جموں و کشمیر کیلئے تیار کردہ پالیسیوں کا بھی تذکرہ کیا ۔

TOPPOPULARRECENT