Thursday , August 24 2017
Home / شہر کی خبریں / کشمیر سے تلنگانہ کے یاتریوں کی محفوظ واپسی کے اقدامات

کشمیر سے تلنگانہ کے یاتریوں کی محفوظ واپسی کے اقدامات

محمد علی شبیر کے مکتوب پر چیف سکریٹری حکومت تلنگانہ کا ردعمل
حیدرآباد ۔ 11 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز) : چیف سکریٹری تلنگانہ مسٹر راجیو شرما نے قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل مسٹر محمد علی شبیر کے مکتوب پر فوری ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے انہیں ٹیلی فون پر بتایا کہ کشمیر کی وادیوں میں پھنسے ہوئے تلنگانہ کے 1000 امرناتھ یاتریوں کو محفوظ طریقے سے واپس لانے کے لیے ضروری اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ واضح رہے کہ کشمیر میں سیکوریٹی فورسیس اور علحدگی پسندوں میں جھڑپوں کے باعث سارے جموں کشمیر میں کرفیو جیسی صورتحال ہے ۔ امرناتھ یاترا کے لیے جانے والے تلگو ریاستوں کے 1500 یاتری بالخصوص تلنگانہ کے 1000 یاتری کشمیر کی وادیوں میں پھنسے ہوئے ہیں ۔ آج قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل مسٹر محمد علی شبیر نے چیف سکریٹری تلنگانہ مسٹر راجیو شرما کو ایک مکتوب روانہ کیا جس پر ڈپٹی فلور لیڈر کونسل مسٹر پی سدھاکر ریڈی نے بھی دستخط کئے ہیں ۔ مسٹر محمد علی شبیر نے اپنے مکتوب میں بتایا کہ امرناتھ کی پوجا کے لیے تلنگانہ کے 1000 یاتری ، 29 جون کو کشمیر کے لیے روانہ ہوچکے ہیں ۔ واپسی سے عین قبل حزب کمانڈر کے انکاونٹر میں ہلاکت کے بعد کشمیر کے حالت بگڑ گئے ہیں جس کی وجہ سے تلنگانہ کے یاتری گذشتہ تین دن سے کشمیر کی وادیوں میں پھنسے ہوئے ہیں اور بغیر نیند کی راتیں گذار رہے ہیں ۔ ان یاتریوں میں کئی ضعیف یاتری بھی شامل ہیں ۔ سرد موسم کے باعث کئی یاتریوں کی صحت بھی ناساز ہے ۔ سیکوریٹی فورسیس انہیں وہاں سے نکلنے کی اجازت نہیں دے رہے ہیں ۔ حالت معمول پر واپس ہونے کے بعد اپنے اپنے ریاستوں کو واپس ہونے کا مشورہ دے رہے ہیں کرفیو جیسی صورتحال کے باعث تلنگانہ کے یاتریوں کو کھانے پینے کی بھی سہولت نہیں ہے لہذا حکومت تلنگانہ فوری حرکت میں آئے اور کشمیر کی وادیوں میں پھنسے ہوئے تلنگانہ کے یاتریوں کو محفوظ طریقے سے واپس لانے کے لیے ضروری اقدامات کریں اور ایک ٹیم کشمیر کو روانہ کرتے ہوئے تلنگانہ کے یاتریوں کو واپس لانے اور انہیں راحت فراہم کرنے کے اقدامات کرنے پر زور دیا جس پر وصول ہوتے ہی چیف سکریٹری مسٹر راجیو شرما نے قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل کو فون پر اطلاع دی کے تلنگانہ کے امرناتھ یاتریوں کو محفوظ طریقے سے واپس لانے کے لیے حکومت کی جانب سے اقدامات کئے جارہے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT