Monday , March 27 2017
Home / Top Stories / کشمیر میں انکاؤنٹر ایک پولیس کانسٹبل اور دو عسکریت پسند ہلاک

کشمیر میں انکاؤنٹر ایک پولیس کانسٹبل اور دو عسکریت پسند ہلاک

ترال میں 12 گھنٹوں تک فائرنگ کا تبادلہ ، ہلاکتوں پر تجسس ، عوام سڑکوں پر نکل آئے ، پولیس سے جھڑپیں
سرینگر ۔ /5 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) جنوبی کشمیر کے علاقہ ترال میں تقریباً 12 گھنٹوں تک جاری رہے ایک انکاؤنٹر میں ایک پولیس اہلکار اور دو عسکریت پسند ہلاک ہوگئے ۔ جن میں ایک عسکریت پسند حزب المجاہدین کا کارندہ تھاجس کی شناخت عاقب بھٹ کی حیثیت سے کی گئی ہے اور وہ عاقب مولوی کی عرفیت سے مشہور تھا ۔ دوسرا مہلوک عسکریت پسند سیف اللہ عرف اسامہ ایک پاکستانی دہشت گرد تھا جو جیش محمد کیلئے کام کررہا تھا ۔ اڑی کے ایک پولیس کانسٹبل منظور احمد نائک بھی ان عسکریت پسندوں کے خلاف انکاؤنٹر میں ہلاک ہوگئے جو ہفتہ کو شام 7 بجے شروع اور دوسرے روز صبح 6.30 بجے ختم ہوا ۔ روپوش عسکریت پسند عاقب بھٹ نے رات کے پچھلے پہر اپنے والد سے موبائیل پر بات کرتے ہوئے آخری مرتبہ خدا حافظ کہا ۔ عہدیداروں نے ان تفصیلات کا انکشاف کرتے ہوئے مزید کہا کہ عاقب مقامی ساکن تھا اور اس کا موروثی گھر ترال کے ہی حائین محلہ میں واقع ہے ۔ سکیورٹی فورسیس کو اس علاقہ کے ایک جولاہے کے گھر میں دو عسکریت پسندوں کے روپوش ہونے کی خفیہ اطلاعات موصول ہوئی تھیں جس کے بعدپولیس ، فوج اور سی آر پی ایف نے اس گھر کا محاصرہ کرلیا تھا ۔ شام 7 بجے عسکریت پسندوں سے پہلا رابطہ کیا گیا ۔جس کے بعد اس جانب سے بلاوقفہ اندھادھن فائرنگ شروع کردی گئی اور جواب میں سکیورٹی فورسیس نے بھی فائرنگ کی ۔ ترال ٹاون کو حزب المجاہدین کے عسکریت پسند برہان وانی کے سبب غیرمعمولی شہرت حاصل ہوگئی تھی ۔ اس قانون میں گزشتہ روز بھی انکاؤنٹر کے دوران مقامی افراد سڑکوں پر جمع ہوگئے تھے اور روپوش عسکریت پسندوں کو بحافظت فرار ہونے میں مدد کرنے کی کوشش کی تھی ۔ اس دوران انسداد تخریب کاری مہم میں مصروف سکیورٹی فورسیس پر سنگباری کی گئی ۔

گجرات کے ضلع کچھ میں زلزلہ
احمد آباد ۔ /5 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) گجرات کے ضلع کچھ میں زلزلہ کا ایک اوسط جھٹکہ محسوس کیا گیا جس کی شدت رختر اسکیل پر 4.0 ریکارڈ کی گئی ۔ ایک متعلقہ عہدیدار نے کہا کہ رات 2.45 بجے ہوئے اس  زلزلہ سے کسی جانی یا مالی نقصان کی اطلاع موصول نہیں ہوئی ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT