Saturday , August 19 2017
Home / Top Stories / کشمیر میں حزب المجاہدین کمانڈر غزنوی ہلاک

کشمیر میں حزب المجاہدین کمانڈر غزنوی ہلاک

عسکریت پسندوں کے ساتھ 12 گھنٹے طویل انکاؤنٹر ، دو فوجی جوان بھی زخموں سے جانبر نہ ہوسکے
سرینگر ۔ /13 اگست (سیاست ڈاٹ کام) جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیان میں کل رات عسکریت پسندوں کے ساتھ شروع ہوئے انکاؤنٹر میں حزب المجاہدین کے 3 ارکان بشمول خود ساختہ چیف آپریشن کمانڈر یٰسین ایٹو عرف غزنوی ہلاک ہوگئے جبکہ دو فوجی جوان بھی شہید ہوئے ۔ یہ انکاؤنٹر تقریباً 12 گھنٹے جاری رہا ۔ ڈائرکٹر جنرل پولیس ڈاکٹر ایس پی وید نے ٹویٹ کر کے اس تصادم میں تینوں جنگجو وں کے مارے جانے کی تصدیق کی ۔پولیس کے ترجمان نے بتایا کہ جنوبی کشمیر کے شوپیاں ضلع کے اونیرا گاؤں میں راشٹریہ رائفلس (آر آر)، جموں و کشمیر پولیس کے خصوصی مہم گروپ (ایس اوجی) اور سنٹرل ریزرو پولیس فورس نے علاقے میں حزب المجاہدین کے تین جنگجوؤں کے پوشیدہ ہونے کی اطلاع کی بنیاد پر کل رات مشترکہ تلاشی مہم شروع کی۔ذرائع کے مطابق فورسز نے علاقے میں جیسے ہی جنگجوؤں کے خلاف مہم شروع کی مقامی لوگ سڑکوں پر اتر آئے اور کارروائی میں رکاوٹ پیدا کرنے کوشش کی۔ فورسز جیسے ہی اونیرا گاؤں میں استھان محلے میں آگے بڑھنے لگے ، وہاں پہلے سے روپوش جنگجوؤں نے خود کار ہتھیاروں سے فائرنگ شروع کر دی جس کا سکیورٹی فورسز نے بھی جواب دیا۔دونوں جانب سے ابتدائی فائرنگ میں پانچ جوان زخمی ہو گئے جن میں سے دو جوانوں نے ہسپتال جانے سے پہلے دم توڑ دیا۔ذرائع کے مطابق جنگجوؤں کو پکڑنے اضافی سکیورٹی کو بلایا گیا اور علاقے کو چاروں طرف سے گھیر لیا گیا۔ کل دیر رات روکی گئی تلاشی مہم کو آج صبح پھر شروع کیا۔جنگجو جس گھر میں چھپ کرفائرنگ کر رہے تھے ، سکیورٹی فورسز نے اس گھر کو دھماکے سے اڑا دیا جس میں تینوں جنگجو مارے گئے ۔اس انکاؤنٹر میں حزب المجاہدین کو کمانڈر غزنوی کی ہلاکت سے دھکا پہونچا ۔ غزنوی کا تعلق وسطیٰ کشمیر کے ضلع بڈگام سے ہے اور 2016 ء میں گروپ کے کمانڈر برہان وانی کی انکاؤنٹر میں ہلاکت کے بعد وادی میں جو بدامنی پیدا ہوئی ، غزنوی اس میں شریک تھا ۔ بڈگام سے غزنوی کے ارکان خاندان کو پولیس نے انکاؤنٹر کے مقام پہونچایا جہاں انہوں نے اس کی شناخت کی ۔ وہ 1996 ء میں حزب المجاہدین سے وابستہ ہوا اور 2007 ء میں خودسپردگی اختیار کی تھی ۔ 2014 ء میں اسے پیرول پر رہا کیا گیا پھر وہ عسکریت پسند گروپ سے وابستہ ہو گیا اور خود ساختہ چیف آپریشنس کمانڈر تھا ۔

TOPPOPULARRECENT