Tuesday , September 26 2017
Home / ہندوستان / کشمیر میں سی آر پی ایف قافلہ پر حملہ دو جوان اور ایک شہری ہلاک

کشمیر میں سی آر پی ایف قافلہ پر حملہ دو جوان اور ایک شہری ہلاک

سرینگر ۔ 20 ۔ فروری : ( سیاست ڈاٹ کام ) : سرینگر جموں قومی شاہراہ پر پامپورے مقام کے قریب سی آر پی ایف قافلہ پر انتہا پسندوں نے حملہ کیا جن میں دو جوان اور ایک شہری ہلاک ہوگئے ۔ اس حملہ میں دیگر 9 زخمی بتائے گئے ہیں ۔ حملہ آور ایک قریبی سرکاری عمارت میں روپوش ہونے سے قبل یہ حملہ کیا ۔ یہاں سی آر پی ایف اور مقامی پولیس نے اس عمارت سے شہریوں کا تخلیہ کرانے میں کامیابی حاصل کی تھی جس سے امکانی یرغمالی صورتحال سے بچا جاسکا ۔ سرینگر کے مضافات میں واقع ایک انٹرپرینر شپ ڈیولپمنٹ انسٹی ٹیوٹ میں کئی شہری موجود تھے ۔ ڈائرکٹر جنرل پولیس جے اینڈ کے کے راجندر نے بتایا کہ ہم نے اس عمارت سے تمام شہریوں کو بچالیا ہے ۔ جن لوگوں کو عمارت سے خالی کروایا گیا ان میں سے ایک شہری کا کہنا کہ انتہا پسندوں نے ان سے کہا کہ وہ یہ جگہ چھوڑ دیں کیوں کہ ہم کسی شہری کو نقصان پہونچانا نہیں چاہتے ۔ فوجی جوانوں نے اس مقام پر پہونچکر مقامی پولیس کی مدد کرتے ہوئے فائرنگ کی ۔ جوابی فائرنگ میں سی آر پی ایف قافلہ کو نشانہ بنایا گیا جس میں دو جوان اور ایک شہری ہلاک ہوئے ۔ اس مقام پر وقفہ وقفہ سے فائرنگ ہورہی ہے ۔ سیکوریٹی فورس نے علاقہ کو پوری طرح سے گھیرے میں لے لیا گیا ۔۔

اب کشمیری مسلم ہونا بھی جرم ہوگیا
عمر عبداللہ کا ریمارک
سرینگر 20 فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) جے این یو اسٹوڈنٹس یونین کی نائب صدر شہلا رشید شوری سے پوچھ تاچھ کرنے بی جے پی کے ایک حامی اشوک پنڈت کے مطالبہ پر تنقید کرتے ہوئے سابق چیف منسٹر عمر عبداللہ نے آج کہا کہ اب ایک کشمیری مسلم ہونا بھی جرم ہوگیا ہے اور اس پر پوچھ تاچھ ہوگی ۔ عمر عبداللہ نے اپنے ٹوئیٹر پر کہا کہ اب کشمیری مسلم ہونا بھی جرم ہوگیا ہے اور اس پر پوچھ تاچھ ہوگی ۔ نیشنل کانفرنس کے ورکنگ صدر نے جے این یو میں کشمیری طلبا کو ہراسانی کی مذمت کی ہے ۔

وہ فلم ساز اشوک پنڈت کے اس مطالبہ پر رد عمل کا اظہار کر رہے تھے کہ جے این یو معاملہ میں شہلا رشید نائب صدر طلبا تنظیم سے بھی پوچھ تاچھ ہونی چاہئے ۔

TOPPOPULARRECENT