Wednesday , September 20 2017
Home / Top Stories / کشمیر میں فوجی کیمپ پر حملہ ، مزید2,000 فورس روانہ

کشمیر میں فوجی کیمپ پر حملہ ، مزید2,000 فورس روانہ

Indian paramilitary soldiers walk back towards their base camp during curfew in Srinagar, Indian controlled Kashmir, Saturday, July 16, 2016. Protests and curfew imposed in the disputed Himalayan region continued for the eight straight day to check anti-India violence following the recent killing of Burhan Wani, chief of operations of Hizbul Mujahideen, Kashmir's largest rebel group. (AP Photo/Dar Yasin)

سرینگر۔ 17 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) کشمیر کے ضلع باندی پورہ میں ہجوم نے آج ایک فوجی کیمپ میں گھسنے کی کوشش کی جس کی وجہ سے دن بھر جاری پرامن صورتحال پھر ایک بار بگڑ گئی جبکہ مرکز نے وادی میں سکیورٹی کو مزید بہتر بنانے کے مقصد سے اضافی سی آر پی ایف کے 2,000 جوان روانہ کئے ہیں۔ وادی میں 9 جولائی سے جاری تشدد میں اب تک مہلوکین کی تعداد 39 ہوگئی ہے۔ پولیس نے بتایا کہ احتجاجیوں نے باندی پورہ کے اجاز میں فوجی کیمپ پر حملہ کردیا جس کی وجہ سے سکیورٹی فورسیس کو فائرنگ کیلئے مجبور ہونا پڑا۔ اس واقعہ میں تین افراد زخمی ہوگئے۔ اسی طرح شہر کے عید گاہ علاقہ میں سنگباری میں ملوث احتجاجیوں پر سکیورٹی فورسیس کی کارروائی میں دو افراد زخمی ہوئے۔ تشدد کے تازہ واقعات ایسے وقت پیش آئے جبکہ کشمیر کے دیگر حصوں میں آج دن بھر صورتحال پرامن رہی۔ وادیٔ کشمیر کے تمام 10 اضلاع میں احتیاطی اقدام کے طور پر کرفیو جاری ہے۔آج رات ریناواری علاقہ میں احتجاج کے دوران ایک نوجوان پلیٹ کا شکار ہوکر زخمی ہوگیا۔ وادی میں افواہوں کو پھیلنے سے روکنے کیلئے موبائیل فون سرویس آج بھی بدستور معطل رہی۔ وادی میں اسکولوں کی کل سے کشادگی کو موجودہ صورتحال کے پیش نظر ایک ہفتہ کیلئے موخر کردیا گیا ہے۔ حکومت جموں و کشمیر نے گرمائی تعطیلات میں توسیع کا فیصلہ کیا ہے اور 25 جولائی سے اسکولس دوبارہ کھولے جائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT