Wednesday , September 20 2017
Home / Top Stories / کشمیر میں کرفیو کے باوجود کئی جگہ تشدد ، دو ہلاک، 23 زخمی

کشمیر میں کرفیو کے باوجود کئی جگہ تشدد ، دو ہلاک، 23 زخمی

سرینگر، 15 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) کشمیر میں آج کئی جگہوں پر ہجوم نے کرفیو کی خلاف ورزی اور سنگباری کی، اس کے ساتھ ایک پولیس اسٹیشن پر دستی بم سے حملہ ہوا، نیز ہجوم کے درمیان سے مشتبہ عسکریت پسندوں نے فائرنگ بھی کی گئی، اس طرح دو افراد ہلاک اور 23 دیگر زخمی ہوگئے جن میں 9 سکیورٹی مین شامل ہیں۔ کشمیر میں گڑبڑ کے باعث امرناتھ یاترا دوسرے روز بھی معطل رہی ۔ کسی بھی یاتری کو جموں سے وادیٔ کشمیر کی طرف بڑھنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے۔ حکام نے کشمیر کے تمام 10 اضلاع میں گڑبڑ کے اندیشے سے کرفیو لاگو کردیا تھا کیونکہ حزب المجاہدین کے عسکری کمانڈر برہان وانی کی ہلاکت کے بعد یہ پہلا جمعہ رہا۔ تاہم کئی مقامات بشمول کپواڑہ، بارہمولا، سوپور، گنڈربل، رفیع آباد، بندی پورہ، کلگام اور پلوامہ میں کرفیو کی ہجوم نے خلاف ورزی کی، ایک پولیس عہدہ دار نے یہ بات کہی۔ ضلع کپواڑہ کے درگمولا میں ہجوم نے سکیورٹی فورسیس کو نشانہ بنایا، جنھوں نے جواب میں فائرنگ کردی، جس کے نتیجے میں تین عام شہری زخمی ہوئے۔ ان میں سے ایک شخص مشتاق احمد غنی زخمی سے جانبر نہ ہوا۔ دیگر ہلاکت جنوبی کشمیر میں کلگام کے یاریپورہ میں ہوئی۔ دریں اثناء علحدگی پسندوں نے کشمیر میں بند کی اپیل دو یوم کی توسیع کے ساتھ 18 جولائی تک بڑھا دی ہے۔

جموں میں مسلسل ساتویں دن بھی
موبائیل انٹرنیٹ معطل
جموں 15 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) جموں میں آج مسلسل ساتویں دن بھی موبائیل انٹرنیٹ خدمات کو معطل رکھا گیا جبکہ علاقہ میں صورتحال معمول پر ہی رہی ہے۔ لا اینڈ آرڈر مسئلہ کا اندیشہ محسوس کرتے ہوئے حکام نے سارے جموں علاقہ میں موبائیل انٹرنیٹ خدمات کو معطل کردیا تھا ۔ حزب المجاہدین کمانڈر برہان وانی کی 8 جولائی کو ہلاکت کے بعد یہاں گذشتہ سات دن سے یہ تحدیدات عائد ہیں۔ ڈویژنل کمشنر جموں نے بتایا کہ آج جمعہ کی وجہ سے حکام کا اعلی سطح کا اجلاس منعقد نہیں ہوسکا ہے جس میں صورتحال پر غور کیا جانا تھا ۔ تاہم یہ اجلاس کل منعقد ہوگا جس میں خدمات کی بحالی کے تعلق سے غور کیا جاسکتا ہے ۔ جموں میں تاجر برادری کا کہنا ہے کہ موبائیل انٹرنیٹ معطل رہنے کی وجہ سے سب سے زیادہ نقصان ان کا ہو رہا ہے ۔ تاہم آج کشمیر بدستور تشدد سے متاثر رہا جہاں جمعہ کو کئی مقامات پر حالات بے قابو ہوئے اور دو افراد ہلاک ، 23 دیگر زخمی ہوگئے۔ گزشتہ جمعہ کو برہان وانی کی ہلاکت کے بعد سے آج کے جمعہ کے تعلق سے کافی اندیشے تھے اور عملاً اسی طرح کے حالات کا سامنا ہوا ہے۔

TOPPOPULARRECENT