Saturday , August 19 2017
Home / Top Stories / کشمیر میں یو پی اے دور کی کامیابیوں کو غلط پالیسیوں نے بیکار کردیا

کشمیر میں یو پی اے دور کی کامیابیوں کو غلط پالیسیوں نے بیکار کردیا

بی جے پی سے نمٹنے سکیولر جماعتوں میں اتحاد کی ضرورت ۔ عید ملن تقریب سے کانگریس نائب صدر راہول گاندھی کا اظہار خیال

نئی دہلی 12 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے الزام عائد کیا کہ یو پی اے حکومت نے جموں و کشمیر میںجو کامیابیاں حاصل کی تھیں انہیں این ڈی اے نے بیکار کردیا ہے ۔ راہول گاندھی نے کل رات یہاں ایک عید ملن تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس زیر قیادت یو پی اے نے جموں و کشمیر میں حالات کو بہتر بنانے کی سمت جو پیشرفت کی تھی انہیں مودی حکومت کی تباہ کن پالیسیوں نے ختم کردیا ۔یہ تقریب جمیعۃ العلما ہند کے سربراہ مولانا اسد مدنی نے منعقد کی تھی ۔ راہول گاندھی نے کہا کہ جموں و کشمیر میں صورتحال سے نمٹنے میں جو طریقہ کار اختیار کیا گیا ہے وہ درست نہیں ہے اور اس کی وجہ سے یہاں تباہ کن صورتحال پیدا ہوئی ہے ۔ راہول گاندھی نے یہ ریمارکس ایسے وقت میں کئے ہیں جبکہ جموں و کشمیر میں مسلسل احتجاج اور فائرنگ میں عام شہریوں کی ہلاکت کاسلسلہ چل رہا ہے ۔

اس تقریب میں جے ڈی یو کے شرد یادو ‘ سی پی ایم کے سیتا رام یچوری و محمد سلیم کے علاوہ کانگریس کے غلام نبی آزاد ‘ سلمان خورشید اور پرکاش جیسوال نے شرکت کی ۔ بریلوی مسلک کے مولانا توقیر رضا بھی تقریب میں شریک رہے ۔ راہول گاندھی نے کہا کہ بی جے پی سے مقابلہ کیلئے سکیولر جماعتوں میں اتحاد کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ ومیر اعظم نریندر مودی اور آر ایس ایس کی جانب سے ملک کو فرقہ وارانہ اور ذات پات کی خطوط پر تقسیم کیا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ عوام کو تقسیم کرنا آسان ہے بہ نسبت انہیں متحد کرنے کے ۔ تقریب میں یو پی کانگریس کے تقریبا ایک درجن قائدین نے بھی شرکت کی ۔ راہول نے کہا کہ سکیولر ووٹوں کی تقسیم کے نتیجہ میں بی جے پی کو سیاسی فائدے حاصل ہوئے ہیں۔ اگر ہم کو فرقہ پرست طاقتوں کو شکست دینا ہے تو ہم کو متحد ہونے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان کی پارٹی فرقہ پرست اور فاشسٹ طاقتوں کو ملک کے سکیولر کردار کو بدلنے کی اجازت ہرگز نہیں دے گی ۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے 1947 میں ملک کی تقسیم کی شدت سے مخالفت کی تھی ۔ ہم نے سکیولر ہندوستان کیلئے آواز اٹھائی اور اس ملک کے سکیولر اور جمہوری ڈھانچہ کو بدلنے کی اجازت ہرگز نہیں دی جائیگی ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے شرد یادو نے کہا کہ ہندوستانیوں کی اکثریت سکیولر ہے ۔ لیکن یہ واضح ہوگیا ہے کہ سکیولر ووٹ تقسیم ہوجاتے ہیں جس کے نتیجہ میں بی جے پی اور اس کی حلیفوں کو فائدہ ہوتا ہے ۔ ہم کو ایک وسیع تر محاذ قائم کرنے کی ضرورت ہے تاکہ ملک میں سکیولر ووٹوں کی تقسیم اور فرقہ پرست طاقتوں کے پھیلنے اور ان کے مستحکم ہونے کو روکا جاسکے ۔

TOPPOPULARRECENT