Friday , August 18 2017
Home / ہندوستان / کشمیر کی ’ آزادی ‘ کیلئے پاکستان اپنی تائید و حمایت جاری رکھے گا

کشمیر کی ’ آزادی ‘ کیلئے پاکستان اپنی تائید و حمایت جاری رکھے گا

ہنگامے روکنے پر زور‘ کشمیری عوام کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی ‘پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط کی اشتعال انگیز تقریر
نئی دہلی 14 اگسٹ ( سیاست ڈاٹ کام ) اپنے اشتعال انگیز ریمارکس میں پاکستان نے آج کہا کہ وہ اپنے یوم آمادی کو کشمیر کی آزادی کے نام معنون کر رہا ہے اور ریاست کے عوام کی مکمل سفارتی ‘ سیاسی اور اختلاقی تائید کا سلسلہ جاری رہے گا ۔ پاکستانی ہائی کمشنر متعینہ ہندوستان عبدالباسط نے یہ ریمارکس اپنے ملک کی یوم آزادی تقاریب کے دوران کئے جو اس کے سفارتخانہ میں منعقد ہوئی تھیں۔ ہندوستان نے کل عملا پاکستان کی جانب سے جموں و کشمیر پر بات چیت کی دعوت کو ٹھکرا دیا تھا اور کہا تھا کہ پاکستان کی تائید سے سرحد پار سے دہشت گردی کا سلسلہ رکنا چاہئے ۔ عبدالباسط نے یہ ریمارکس ایسے وقت میں کئے جبکہ پاکستانی افواج نے جموں و کشمیر کے پونچھ ضلع میں لائین آف کنٹرول پر جنگ بندی کی خلاف ورزی کی تھی ۔ عبدالباسط نے اپنے خطاب میں کہا کہ جہاں تک جموں و کشمیر کا سوال ہے ہم اس سال کے یوم آزادی کو کشمیر کی آزادی کے نام کر رہے ہیںاور ہمارا یہ کامل یقین ہے کہ جموں و کشمیر کے عوام کی جانب سے دی جانے والی قربانیاں ضائع نہیں جائیں گی ۔ عبدالباسط نے کہا کہ کشمیر میں جو ہنگامے چل رہے ہیں ان کو ختم ہونا چاہئے ۔ پاکستان جموں و کشمیر کے بہادر عوام کی مکمل سفارتی ‘ سیاسی اور اخلاقی تائید جاری رہے گا تاوقتیکہ وہ اپنا حق خود اختیاری حاصل نہ کرلیں۔ باسط نے کہا کہ چاہے جتنی بھی طاقت استعمال کی جائے جموں و کشمیر کے عوام کی سیاسی خواہشات کو دبایا نہیں جاسکتا اور یہ جدوجہد آزادی اپنے منطقی انجام کو پہونچے گی ۔

اپنے خطاب میں عبدالباسط نے کہا کہ پاکستان نے ہمیشہ ہی ہندوستان کے ساتھ بہتر تعلقات کیلئے کوشش کی ہے جو سالمیت و مساوات کی بنیاد پر ہونے چاہئیں اور تمام باہمی تنازعات کو پرامن طور پر حل کیا جانا چاہئے ۔ انہوں نے تاہم کہا کہ کوئی بھی کشمیری عوام کی منطقی جدوجہد کی اہمیت کو نہ گھٹاسکتا ہے اور نہ اسے مسترد کرسکتا ہے اور یہ بین الاقوامی برادری کی ذمہ داری ہے کہ وہ تنازعہ کو حل کرنے اقوام متحدہ کی قرار دادوں پر عمل آوری کو یقینی بنائے ۔ انہوں نے کہا کہ آج ہماری قوم کو کئی چیلنجس کا سامنا ہے ۔ تاہم کوئی طاقت پاکستان کو نقصان نہیں پہونچاسکتی ۔ انہیں جان لینا چاہئے کہ ہمارے عوام چاہے وہ مسلمان ہوں ‘ ہندو ہوں یا سکھ ہوں ہم سب متحد ہیں اور ہم پاکستان کی بہتری کیلئے کوئی بھی قربانی پیش کرنے سے گریز نہیں کرینگے ۔

TOPPOPULARRECENT