Friday , September 22 2017
Home / Top Stories / کشمیر کی صورتحال سے نمٹنے میں کوئی پہلو مخفی نہیں

کشمیر کی صورتحال سے نمٹنے میں کوئی پہلو مخفی نہیں

سب کو اعتماد میں لیا جائے گا ،وزیراعظم نریندر مودی کا خطاب

نئی دہلی ۔ 18 جولائی ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) وادی کشمیر میں بدامنی پر اپوزیشن کی تنقیدوں کا شکار وزیراعظم نریندر مودی نے آج کہا کہ اُن کی حکومت اس معاملے میں کوئی بات مخفی نہیں رکھے گی اور صورتحال سے نمٹنے میں سب کو اعتماد میں لیا جائے گا ۔ انھوں نے این ڈی اے میں شامل جماعتوں کے اجلاس سے خطاب کے دوران یہ بات کہی ، جبکہ اس سے پہلے بی جے پی پارلیمانی پارٹی کی عاملہ کا اجلاس منعقد ہوا تھا جہاں انھوں نے کہاکہ اُن کی حکومت جی ایس ٹی بل پر تمام جماعتوں سے بات کرے گی اور اس کی منظوری کیلئے اتفاق رائے یقینی بنائے گی ۔ شیوسینا لیڈر سنجے راوت نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ نریندر مودی نے کشمیر میں جاری بدامنی کا مسئلہ اُٹھایا اور بی جے پی حلیف جماعتوں کی رائے جاننی چاہی ۔ انھوں نے کہا کہ حکومت اس معاملہ میں کوئی بات مخفی رکھنا نہیں چاہتی اور سب کو اعتماد میں لیا جائے گا ۔ شیوسینا لیڈر نے بتایا کہ انھوں نے وزیراعظم سے کشمیر کی عوام کے ساتھ ’’چائے پر چرچا ‘‘ کا اہتمام کرنے کی خواہش کی۔ انھوں نے کہاکہ عوام وزیراعظم پاکستان نواز شریف کے ساتھ ’’چائے پر چرچا‘‘ کو پسند نہیں کرتے ، خواہ اُن کے ارادے کتنے ہی نیک ہوں ۔ واضح رہے کہ شیوسینا کے بی جے پی کے ساتھ مراسم ٹھیک نہیں اور کئی مسائل پر وہ مودی حکومت کو تنقیدوں کا نشانہ بناتی رہی ہے ۔ وزیراطلاعات و نشریات این وینکیا نائیڈو نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ نریندر مودی نے این ڈی اے قائدین کو جی ایس ٹی بل کی اہمیت اور اسے منظور کرنے کی ضرورت سے واقف کروایا ۔ انھوں نے کہاکہ این ڈی اے کی تمام جماعتیں جی ایس ٹی بل پر متحد ہیں۔ حکومت نے کل کُل جماعتی اجلاس میں یہی نکات پیش کئے تھے۔ وزیر فینانس ارون جیٹلی اور وزیر پارلیمانی اُمور اننت کمار نے بھی ان اجلاسوں سے خطاب کیا اور جاریہ سیشن میں حکومت کے ایجنڈے سے واقف کروایا ۔ قبل ازیں سرکاری ذرائع نے کہا تھا کہ حکومت جی ایس ٹی بل پر اتفاق رائے کیلئے اپوزیشن جماعتوں سے مزید ملاقاتیں کریں گی ۔ اجلاس کے بعد ایک سینئر وزیر نے کہا کہ جہاں تک حکومت کا تعلق ہے ، ہم نے اپنا یہ موقف تمام سیاسی جماعتوں پر واضح کردیا ہے کہ کھلے ذہن کے ساتھ مزید مباحث کیلئے تیار ہیں۔ انھوں نے کہاکہ جی ایس ٹی بل پر اتفاق رائے کیلئے ہم ایک قدم اور آگے جائیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT