Sunday , October 22 2017
Home / Top Stories / کشمیر کے کئی حصوں میں تشدد اور احتجاجی مظاہرے

کشمیر کے کئی حصوں میں تشدد اور احتجاجی مظاہرے

بم حملہ میں زخمی ٹرک ڈرائیور کی موت کے بعد صورتحال بے قابو ،وادی میں آج بند
سرینگر ۔ /18 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) اودھم پور میں 9 دن قبل پٹرول بم حملے میں زخمی ٹرک کنڈکٹر آج جانبر نہ ہوسکا جس کے بعد وادی کشمیر کے کئی علاقوں میں احتجاج شروع ہوگیا ۔ اس سلسلے میں گرفتار کئے گئے 5 افراد کے خلاف انتہائی سخت پبلک سیفٹی ایکٹ نافذ کیا گیا ہے لیکن صورتحال میں کوئی بہتری نہیں آئی ۔ زاہد نامی اس کنڈکٹر کو 74 فیصد جھلسی ہوئی حالت میں دہلی کے صفدر جنگ ہاسپٹل میں شریک کیا گیا تھا جہاں آج 11.30 بجے دن اس کی موت واقع ہوگئی ۔ جنوبی کشمیر میں اننت ناگ کا ساکن زاہد اُس ٹرک کا کنڈکٹر تھا جو کشمیر جارہا تھا جس پر /9 اکٹوبر کو پٹرول بم سے حملہ کیا ۔ ٹرک ڈرائیور شوکت احمد بھی ہاسپٹل میں شریک ہے ۔ زاہد کی موت کی جیسے ہی اطلاع ملی اس کے گاؤں بٹنگو اور اطراف و اکناف کے علاقوں میں لوگ احتجاج کرتے ہوئے سڑکوں پر نکل آئے ۔ اس کے علاوہ کلغام اور سرینگر میں بھی عوام نے کئی مقامات پر احتجاج شروع کردیا ۔ پولیس کو صورتحال قابو میں کرنے کیلئے طاقت کا استعمال کرنا پڑا ۔ زاہد کی نعش دہلی سے ذریعہ سرکاری طیارہ سرینگر لائی گئی ۔ حکمراں پی ڈی پی سربراہ محبوبہ مفتی اور دیگر ریاستی وزراء ایرپورٹ پر موجود تھے ۔ چیف منسٹر مفتی محمد سعید نے زاہد کی موت پر صدمہ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ نفرت اور عدم رواداری کی سیاست کے باعث یہ واقعہ پیش آیا ۔

ڈپٹی چیف منسٹر اور سینئر بی جے پی لیڈر جن کا تعلق جموں سے ہے اور یہ حملہ بھی اسی علاقہ میں ہوا تھا ، واقعہ کی مذمت کی اور کہا کہ ذمہ داروں کو معاف نہیں کیا جائے گا ۔ سابق چیف منسٹر عمر عبداللہ نے بی جے پی اور اس کی حلیف جماعت پر شدید تنقید کرتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی سے جاننا چاہا کہ اس موت کیلئے کسے مورد الزام قرار دیا جائے ۔ ڈائرکٹر جنرل پولیس کے راجیندر کمار نے کہا کہ حملہ میں ملوث 8 کے منجملہ 5 افراد کے خلاف پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ 7 افراد کو گرفتار کرلیا گیا جبکہ ایک فرار ہے ۔ وادی کے مختلف مقامات میں صورتحال بے قابو ہوگئی اور احتجاج کی وجہ سے سرینگر ۔ جموں قومی شاہراہ کو بند کردیا گیا ہے ۔ علحدگی پسند حریت کانفرنس کے دونوں گروپس اور جے کے ایل ایف نے زاہد کی موت کے خلاف کل وادی میں بند کا اعلان کیا ہے ۔ کشمیری پنڈت تنظیم ، کشمیر ہائیکورٹ بار اسوسی ایشن ، تاجرین کی تنظیمیں اور ٹرانسپورٹ یونینوں نے بھی اس بند کی تائید کی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT