Wednesday , August 23 2017
Home / دنیا / کشیدگی میں کمی کیلئے شمالی اور جنوبی کوریا میں بات چیت

کشیدگی میں کمی کیلئے شمالی اور جنوبی کوریا میں بات چیت

فوج کو جنگ کیلئے تیار رہنے شمالی کوریا کا حکم ، سرحد پر چوکسی

پیانگ یانگ۔ 22 اگسٹ ۔(سیاست ڈاٹ کام) جنوبی کوریا کے ایوانِ صدر کے مطابق شمالی اور جنوبی کوریا بڑھتی ہوئی کشیدگی کو کم کرنے کیلئے اعلیٰ سطح پر مذاکرات کر رہے ہیں۔اطلاعات کے مطابق دونوں ممالک کے اعلیٰ رہنماؤں کے درمیان ملاقات سرحدی گاؤں پن منجوم میں ہو رہی ہے۔جنوبی کوریا نے کہا ہے کہ ان کی نمائندگی قومی سلامتی کے امور کے مشیر کوانگ جن اور وزارتِ یونی فیکیشن کے وزیر ہونگ یونگ پیِو کر رہے ہیں۔شمالی کوریا کے اعلیٰ عہدیداروں کے وفد میں ہوانگ پیونگ اور کِم یونگ گون شامل ہیں۔شمالی کوریا نے سرحد پار سے شمالی کوریا مخالف نشریات بند نہ کرنے پر جنوبی کوریا کو ’سخت فوجی کارروائی‘ کی دھمکی دی تھی۔اس دھمکی سے پہلے جمعرات کو دونوں ملکوں کے درمیان ہونے والے فائرنگ کے تبادلے کے بعد شمالی کوریا نے ’نیم حالت جنگ‘ کا اعلان کر دیا تھا۔

شمالی کوریا نے جنوبی کوریا کے لاؤڈ سپیکروں کو تباہ کرنے کی ڈیڈ لائن دی تھی اور اُن پر فائر کھولنے کیلئے اس کی فوج نے جگہ بھی سنبھال لی تھی۔ یہ لاؤڈ سپیکر جنوب کی طرف سے خبرنامے، موسم کی صورت حال اور موسیقی کے پروگرام نشر کر رہے تھے۔شمالی کوریا نے جنوبی کوریا کے لاؤڈ اسپیکروں کو تباہ کرنے کی ڈیڈ لائن دی تھی اس کے بعد جنوبی کوریا نے ان سرحدی علاقوں میں رہائش پذیر تقریباً 4000 ہزار افراد سے علاقے کو خالی کرا لیا ہے اور شمالی کوریا کو ’سخت جوابی کارروائی‘ کی دھمکی دی تھی۔ جنوبی کوریا اور امریکہ کے جنگی جہاز کی سرحدی علاقوں میں پروازیں جاری ہیں۔دونوں مملک کے درمیان 1950-53 کے درمیان ہونے والی جنگ امن معاہدے کے بجائے عارضی صلح نامے پہ ختم ہوئی تھی جس کے بعد سے شمالی اور جنوبی کوریا تکنیکی اعتبار سے حالت جنگ میں ہیں۔

TOPPOPULARRECENT