Thursday , October 19 2017
Home / ہندوستان / کلکتہ میں ملک کے تمام سرکردہ مذہبی رہنماؤں کی مہا پنچایت

کلکتہ میں ملک کے تمام سرکردہ مذہبی رہنماؤں کی مہا پنچایت

کلکتہ18اپریل (سیاست ڈاٹ کام) ملک کی قومی یکجہتی ، بھائی چارہ اور سالمیت کو نقصان پہنچانے کی کوششوں کے دوران ہیومن رائٹس پروٹیکشن ایسوسی ایشن کلکتہ شہر میں گاندھی مورتی کے قریب 20مئی کو مہا پنچایت کا انعقاد کررہی ہے جس میں ملک بھر سے مختلف مذاہب سے سرکردہ لیڈران شریک ہوں گے اور قومی یکجہتی کے پیغام کو عام کرنے کے ساتھ فرقہ وارانہ ہم آہنگی کو نقصان پہنچانے والی کی قوتوں سے مقابلہ کرنے کیلئے حکمت عملی بنائی جائے گی۔ہیومن رائٹس پروٹیکشن ایسوسی یشن کے صدر شمیم احمد نے یو این آئی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ملک کے موجودہ حالات بہت ہی سنگین ہیں ،سماج کے کمزور و پسماندہ طبقات کے مسائل اور ان کی مشکلات سے صرف نظر کرلیا گیا ہے ۔ملک کے عوام کو مسجد ، مندراور ہندو مسلم کی سیاست میں الجھا دیا گیا ہے ۔اس کی آڑ میں کارپوریٹ کمپنیوں کو فائدہ پہنچایا جارہا ہے ۔ ہیومن رائٹس پروٹیکشن اسوسی ایشن نے ان حالات میں ملک کی یکجہتی کی علامت اور بابائے قوم مہاتما گاندھی کی مورتی کے قریب ’’مہا پنچایت‘  کا انعقاد کررہی ہے ۔جو جلسہ و جلوس سے ہٹ کر ایک الگ نوعیت کا پروگرام ہے ۔اس پروگرام میں ملک بھر سے تمام مذاہب کے مذہبی رہنما اور سماجی ورکرس حالات کا تجزیہ کریں گے ۔اس کے بعد مہا پنچایت میں پاس ریزرولیشن کو لے کر ملک کے عوام تک پہنچا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT