Monday , August 21 2017
Home / دنیا / کلیو لینڈ میں ری پبلکن پارٹی کے کنونشن کا آغاز

کلیو لینڈ میں ری پبلکن پارٹی کے کنونشن کا آغاز

سخت سیکوریٹی کے دوران ٹرمپ کے صدارتی امیدوار ہونے کا رسمی اعلان متوقع
کلیولینڈ ۔ 18 ۔ جولائی : ( سیاست ڈاٹ کام ) : امریکہ میں فائرنگ اور تشدد کے دیگر واقعات کے دوران ری پبلکن پارٹی کا زبردست کنونشن شروع ہونے والا ہے جہاں رسمی طور پر ڈونالڈ ٹرمپ کو پارٹی کا صدارتی امیدوار نامزد کیا جائے گا ۔ کوئکنس لون ارینا کے قریب سیکوریٹی فورسیس کے اعلیٰ عہدیداروں کی ہدایت پر بڑی بڑی آہنی رکاوٹیں ایستادہ کی گئی ہیں جو عارضی دیواروں کی طرح ہیں جنہیں بعد ازاں ہٹالیا جائے گا ۔ 18 جولائی تا 21 جولائی ری پبلکن نیشنل کنونشن کے انعقاد کی تیاریاں بہت پہلے سے جاری تھیں ۔ کنونشن کا انعقاد دراصل امریکی شہریوں کو ٹرمپ کو بخوبی سمجھنے کا ایک موقع ہوگا ۔ ری پبلکن پارٹی اس بات کی حواہاں ہے کہ امریکی شہری ٹرمپ کو بحیثیت ایک شخص کے بہتر طور پر سمجھیں بجائے اس کے کہ انہیں صرف صدارتی امیدوار کی حیثیت سے دیکھا جائے ۔ ٹرمپ کی ریالیاں منعقد کرنے والے ارکان نے یہ بات بتائی ۔ دوسری طرف کیمپین منیجرپال منافورٹ نے کہا کہ ہم تمام امریکی شہریوں سے یہ خواہش کرتے ہیں کہ وہ ٹرمپ کو ایک کامیاب تاجر اور عظیم انسان کی حیثیت سے دیکھیں ۔ مسٹر پال نے کہا کہ ایسے تمام لوگ جنہوں نے گذشتہ کئی دہوں سے ٹرمپ کے ساتھ وقت گزارا چاہے وہ کاروبار کے لیے ہو ، دوستی میں ہو یا ایک ساتھ تعلیم حاصل کرنے کا ہو ۔ یہاں تک کہ ایسے لوگوں کے تاثرات بھی پیش کیے جائیں گے جنہوں نے ٹرمپ کے ارکان خاندان کو قریب سے دیکھا ہو اور ان کے ساتھ زندگی کا کچھ حصہ گزارا ہو ۔ منافورٹ نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا کہ ٹرمپ کے ساتھ زندگی کا کچھ حصہ گزارنے والے لوگوں کو ہم نے کچھ اس طرح تیار کیا ہے کہ جب وہ ٹرمپ کے بارے میں اپنے شخصی تجربات کا ذکر کریں گے تو ہر امریکی شہری کو ٹرمپ بحیثیت ایک انسان زیادہ بہتر معلوم ہوں گے ۔ بحیثیت صدارتی امیدوار وہ گذشتہ ایک سال سے اپنی مہم چلا رہے ہیں جس کی کوئی خاص اہمیت نہیں ۔ ہر انسان کا عظیم ہونا ضروری نہیں لیکن ٹرمپ ایک عظیم انسان نہیں بھی ہیں تو انہیں ایک بہتر انسان ضرور کہا جاسکتا ہے ۔ لوگوں نے انہیں بورڈ روم کی کانفرنسوں میں دیکھا ہوگا ۔ مہم چلاتے ہوئے دیکھا ہوگا لیکن اتنے قریب سے کبھی نہیں دیکھا ہوگا جہاں ٹرمپ انہیں اپنے اپنے سے نظر آئیں ۔ لہذا تقاریر کے ذریعہ ٹرمپ کی شخصیت پر روشنی ڈالی جائے گی ۔ 70 سالہ ٹرمپ آج شہر میں آنے والے ہیں تاہم ’ میک امریکہ سیف اگین ‘ کی تھیم والے اس کنونشن سے شاید آج خطاب نہیں کرسکیں گے ۔ اس موقع پر جن اہم اسپیکرس کے ناموں کا اعلان کیا گیا ہے ان میں میلانیا ٹرمپ ، لیفٹننٹ جنرل ( ریٹائرڈ ) مائیکل فلائن ، سینٹیر جون فراسٹ ، جیسن برڈسلے اور کانگریس مین ریان زنکے شامل ہیں ۔ علاوہ ازیں ڈونالڈ ٹرمپ کے دیگر ارکان خاندان بھی ان کے بارے میں اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے ان کی شخصیت کا احاطہ کریں گے ۔ ٹرمپ کے قریبی دوست اور ایسے افراد جنہوں نے کمپنی کے اندر اور کمپنی کے باہر ان کی رفاقت حاصل کی ۔ اپنے خیالات کا اظہار کریں گے ۔ لہذا آپ سب کو ( امریکی شہریوں ) کو معلوم ہوجائے گا کہ ڈونالڈ ٹرمپ نے کس طرح خون پسینہ بہا کر اتنی بڑی صنعت قائم کی ۔ اس موقع پر منافورٹ نے ان قیاس آرائیوں کو مسترد کردیا کہ ری پبلکن پارٹی میں پھوٹ پڑچکی ہے اور کہا کہ ڈونالڈ ٹرمپ کی قیادت میں پارٹی پوری طرح متحد ہے ۔ یہ ٹرمپ کا کنونشن ہے ۔ جو مندوبین شرکت کررہے ہیں وہ ٹرمپ کے مندوبین ہیں اور سب سے اہم بات یہ ہے کہ کنونشن میں جو بھی پیغام دیا جائے گا وہ ٹرمپ کا پیغام کہلائے گا ۔ تازہ ترین اطلاعات کے مطابق ڈونالڈ ٹرمپ جمعرات کی شب کو ’ میک امریکہ ون اگین ‘ کی تھیم پر اپنا خطاب کریں گے جب کہ اسی شام ٹرمپ کے علاوہ دیگر مقررین میں پیٹر تھائل ، ٹام بارک اور ایوانکاٹرمپ بھی شامل ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT