Tuesday , August 22 2017
Home / ہندوستان / کمسن بچی اور معمر خاتون پر سنگباری کا الزام مضحکہ خیز: نیشنل کانفرنس

کمسن بچی اور معمر خاتون پر سنگباری کا الزام مضحکہ خیز: نیشنل کانفرنس

سری نگر ، 12جولائی (سیاست ڈاٹ کام) جموں وکشمیر کی سب سے بڑی اپوزیشن جماعت نیشنل کانفرنس نے وادی کشمیر کی موجودہ صورتحال کو انتہائی مخدوش اور تشویشناک قرار دیتے ہوئے کہاہے کہ حکمرانوں نے سیکورٹی فورسز کو کھلی چھوٹ دے رکھی ہے اور عوام کے خلاف جنگ چھیڑ دی گئی ہے ، عوام کے جان و مال کے محافظ اور امن و قانون کے رکھوالوں نے لوگوں کا جینا دوبھر کردیا ہے اور طاقت کے بے تحاشہ استعمال اور انسانی حقوق کی بدترین پامالیوں کا دائرہ ہر دن گزرنے کے ساتھ وسیع ہوتا جارہا ہے جبکہ زمینی سطح پر حکومت اور وزراء کا کہیں نام و نشان نہیں۔ پارٹی کے ایک ترجمان نے کہا کہ نیشنل کانفرنس کے جنرل سکریٹری علی محمد ساگر نے منگل کو یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر نوائے صبح پر ایک ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کی نااہلی اور غیر سنجیدگی سے حالات بد سے بدتر ہوتے جارہے ہیں اور حکومت کا وزراء کا کہیں نام و نشان نہیں۔ محض 2روز میں 32سے زائد عام شہریوں کی ہلاکت اور 900سے زائد کے زخمی ہونے سے بخوبی اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ امن و قانون کی صورتحال سے نپٹنے کیلئے کس حد تک بے تحاشہ طاقت کا استعمال کیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ مہلوکین میں دمہال ہانجی پورہ کی جوان سالہ دوشیزہ یاسمین اختر اور زخمیوں میں قمرواری کی 5سالہ بچی زہرہ مجید و بج بہاڑہ کی 80سالہ بزرگ خاتون سمیت کئی خواتین کا شامل ہونا حکومت کے اُن دعوؤں کی قلعی کھول دیتی ہے ، جس میں سرکاری ترجمان کے مطابق شدید پتھراؤ، آتشزنی اور ہتھیار چھیننے کی کوششوں کے ردعمل میں فورسز مجبوراً گولیاں چلا رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT