Tuesday , October 24 2017
Home / Top Stories / کم عمر لڑکیوں کی شادیوں کا ریاکٹ ‘ قاضیوں کے دفاتر پر دھاوے

کم عمر لڑکیوں کی شادیوں کا ریاکٹ ‘ قاضیوں کے دفاتر پر دھاوے

ممبئی اور حیدرآباد میں بیک وقت کارروائیاں۔ عرب شہری کی ایک دن میں دو شادیوں کا انکشاف

حیدرآباد ۔ /6 اکٹوبر (سیاست نیوز) پرانے شہر کی کم عمر لڑکیوں کی عربوں سے شادی کے کیس کی تحقیقات تیزی سے جاری ہیں ۔ تازہ کارروائی میں پولیس نے ممبئی اور حیدرآباد کے قاضیوں کے دفاتر پر دھاوا کرکے اہم دستاویزات حاصل کرلئے ۔ تحقیقات میں کئی حیرت انگیز انکشافات ہوئے ہیں جن میں ایک عمانی شہری کی ایک دن میں دو لڑکیوں سے شادی شامل ہے ۔ فلک نما پولیس کی خصوصی ٹیم نے صدر قاضی ممبئی فرید احمد خان کے دفتر اور مکان پر دھاوا کیا اور 27 سال کا ریکارڈ حاصل کرلیا ۔ ریکارڈ کے تجزیہ سے پتہ چلا کہ صدر قاضی ممبئی نے 1992 میں ایک عمانی شہری کی ایک دن میں دو لڑکیوں سے شادی کروائی تھی ۔ اہم شواہد کے طور پر دستاویزات کو ریکارڈ پر لیا ہے ۔ واضح رہے کہ /3 اکٹوبر کو فرسٹ ایڈیشنل میٹروپولیٹین سیشن جج نے صدر اور نائب قاضی ممبئی کی پولیس تحویل میں تین دن توسیع کا حکم دیا جسکے بعد ایڈیشنل انسپکٹر چھتری ناکہ سید عبدالقادر جیلانی قاضیوں اور ایک ٹراویل ایجنٹ احمد کے ہمراہ ممبئی گئے تھے ۔ پولیس نے اس کارروائی میں قاضی فرید احمد خان کے دفتر سے 1990 تا 2017 کا ریکارڈ ضبط کرلیا ہے اور حیدرآباد منتقل کیا جارہا ہے ۔ شادیوں کے عوض ویسٹرن یونین سے رقومات حاصل کرنے کا بھی ریکارڈ حاصل کرلیا ہے ۔ ڈی سی پی ساؤتھ زون وی ستیہ نارائنا نے بتایا کہ قاضیوں کے خلاف تحقیقات میں شدت پیدا کردی گئی اور ممبئی سے ملے میریج ریکارڈ کا جو اردو میں ہے ترجمہ کروایا جارہا ہے تاکہ عدالت میں ثبوت کے طور پر داخل کیاجاسکے ۔ انہوں نے کہا کہ ضبط ریکارڈ سے ظاہر ہوتا ہے کہ صدر قاضی ممبئی نے گزشتہ برسوں میں ہر ماہ 15 تا 20 لڑکیوں کی عرب باشندوں سے شادیاں کروائیں اور فرضی نکاح نامے جاری کئے ۔ پولیس نے وقف بورڈ و محکمہ اقلیتی بہبود مہاراشٹرا کی مدد سے یہ کارروائی کی ہے ۔ مہاراشٹرا وقف بورڈ صدر قاضی ممبئی کی سرگرمیوں سے لاعلم تھا ۔ پولیس نے آج قاضی علی عبداللہ رفاعی کے دفتر پر بھی دھاوے کئے جہاں دستخط شدہ سیاہ نامے برآمد کئے گئے جن کی خانہ پری نہیں کی گئی ۔ اے سی پی فلک نما مسٹر محمد تاج الدین احمد نے بتایا کہ علی عبداللہ رفاعی حیدرآباد میں نکاح پڑھانے کے بعد صدر قاضی ممبئی سے فرضی سیاہ نامے حاصل کرتا تھا ۔ پولیس نے قاضی کے دفتر سے ایک لڑکی کا پاسپورٹ و دیگر دستاویز بھی برآمد کئے ہیں جس کی عمانی باشندے سے 8 ماہ قبل شادی کرائی گئی تھی لیکن رقم کی عدم ادائیگی پر قاضی لڑکی کو دستاویزات دینے سے انکار کررہا ہے ۔ پولیس نے قاضی رفاعی کے خلاف ایک اور مقدمہ درج کیا ہے ۔

 

TOPPOPULARRECENT