Saturday , October 21 2017
Home / شہر کی خبریں / کنہیا کمار کی آج حیدرآباد یونیورسٹی آمد

کنہیا کمار کی آج حیدرآباد یونیورسٹی آمد

روہت ویمولہ کی والدہ سے ملاقات اور کل احتجاجی طلبہ سے خطاب متوقع
حیدرآباد۔22 مارچ (سیاست نیوز) قومی سطح پر طلبہ تحریک میں نئی جان پیدا کرنے والے کنہیا کمار کی حیدرآباد آمد پر محکمہ پولیس کی خفیہ ایجنسیاں چوکسی اختیار کئے ہوئے ہیں۔ کنہیا کمار 23 مارچ کی شب حیدرآباد پہونچیں گے اور حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی میں روہت ویمولہ کیلئے جاری احتجاج میں شرکت کرتے ہوئے طلبہ سے خطاب کریں گے۔ تفصیلات کے بموجب جواہر لال نہرو یونیورسٹی صدر طلبہ یونین کامریڈ کنہیا کمار 23 مارچ کو حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی میں شب بسری میں کریں گے اور 24 مارچ کو طلبہ کے عظیم الشان احتجاجی پروگرام سے خطاب کریں گے۔ حیدرآباد پہونچنے اور روہت ویمولہ کیلئے جاری احتجاج میں شرکت سے قبل کنہیا کمار کی نائب صدر آل انڈیا کانگریس کمیٹی مسٹر راہول گاندھی سے دہلی میں ملاقات پر بھی سیاسی حلقوں میں ہلچل پیدا ہوچکی ہے اور کنہیا کمار کی آمد سے قبل حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی میں پولیس کی جانب سے طلبہ پر کئے گئے لاٹھی چارج کے باعث کنہیا کے دورہ کو مزید اہمیت حاصل ہوچکی ہے۔ کنہیا کمار پر ملک سے غداری کے مقدمات کے اندراج کے بعد ملک بھر میں زعفرانی طاقتوں کے خلاف طلبہ نے محاذ کھول دیا ہے جس کی قیادت بالواسطہ طور پر کنہیا کمار کررہے ہیں۔ کنہیا کمار کی حیدرآباد آمد اور حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی میں طلبہ سے خطاب کے بعد دیگر سرگرمیوں کے متعلق تاحال کوئی انکشاف نہیں کیا گیا ہے لیکن محکمہ پولیس کی جانب سے تمام سرگرمیوں پر خصوصی نگاہ رکھی جارہی ہے۔ یونیورسٹی طلبہ کا کہنا ہے کہ آر ایس ایس کے نظریات کے خلاف جاری جنگ میں طلبہ کسی قسم کی کوئی مفاہمت نہیں کریں گے اور اس وقت تک یہ جنگ جاری رہے گی جب تک آزادی نہیں ملتی۔ کنہیا کمار کے ساتھ جے این یو اسٹوڈنٹ یونین کے دیگر قائدین بھی حیدرآباد پہونچنے کی اطلاع ہے جو روہت ویمولہ کی موت کے خلاف جاری احتجاج میں شرکت کے ساتھ روہت کی والدہ اور طلبہ تنظیموں کی جانب سے کئے جارہے ’’روہت ایکٹ‘‘ کے مطالبہ کی حمایت کریں گے۔ بتایا جاتا ہے کہ روہت ویمولہ کی موت اور دلتوں کے علاوہ اقلیتی طبقات کے ساتھ جاری ناانصافیوں کے خلاف چلائی جارہی اس تحریک کو دیگر جامعات تک بھی وسعت دینے کے منصوبہ کا اعلان متوقع ہے۔

TOPPOPULARRECENT