Wednesday , August 23 2017
Home / ہندوستان / کوئلہ بلاک الاٹمنٹ اسکام

کوئلہ بلاک الاٹمنٹ اسکام

خصوصی عدالتی احکام کے خلاف اپیل سپریم کورٹ میں ہوگی
نئی دہلی،13 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے آج واضح کر دیا کہ کوئلہ بلاک الاٹمنٹ گھوٹالہ معاملے کی خصوصی عدالت میں سماعت کے دوران جاری ہونے والے کسی حکم کے خلاف درخواستوں کی سماعت خود سپریم کورٹ میں ہوگی ۔ کورٹ کا یہ حکم صنعتکار نوین جندال، سابق وزیر اعلی مدھو کوذا اور دیویندر درڈا کیلئے جھٹکا خیال کیا جا رہا ہے ، جنہوں نے عرضی داخل کر کے کہا تھا کہ خصوصی عدالت کے عبوری حکم کو دہلی ہائیکورٹ میں چیلنج کرنے اجازت دی جانی چاہئے ۔ ان تمام کی دلیل تھی کہ قانون میں یہ اصول ہے کہ زیریں عدالت کے کسی بھی حکم کے خلاف ہائیکورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا جا سکتا ہے اور ایسا کرنا ان کا قانونی حق ہے ۔ تاہم، عدالت نے ان کی دلیلوں کو مسترد کر دیا ۔ جسٹس مدن بی لوکر کی صدارت والی تین رکنی بنچ نے 25 جولائی 2014 کے حکم پر نظر ثانی کرنے سے انکار کر دیا۔ عدالت عظمی نے کہا کہ زیریں عدالت کے عبوری حکم کو ہائی کورٹ میں چیلنج نہیں کیا جاسکتا ہے ۔ عدالت نے سابقہ حکم میں بھی کہا تھا کہ کوئلہ بلاک الاٹمنٹ گھوٹالہ معاملے کی سماعت کے دوران خصوصی عدالت کے کسی بھی عبوری حکم کو صرف عدالت عظمی میں چیلنج کیا جا سکے گا۔ جسٹس لوکر نے کہا کہ وہ 25 جولائی 2014 کے اس حکم پر نظر ثانی کرنا مناسب نہیں مانتے ہیں۔ سپریم کورٹ کا آج کا حکم مسٹر جندال سمیت کوئلہ بلاک الاٹمنٹ گھوٹالہ معاملے کے مختلف ملزمان کی درخواستوں پر آیا ہے جن میں یہ پوچھا گیا تھا کہ آیا کولگیٹ معاملے کی سماعت کے دوران خصوصی عدالت کے عبوری حکم کو دہلی ہائی کورٹ میں چیلنج کیا جا سکتا ہے یا نہیں؟

کونڈاگاؤں میں پولیس اور نکسلائیٹس کے مابین تصادم
کونڈا گاؤں13 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) چھتیس گڑھ کے کونڈاگاؤں ضلع میں آج صبح پولیس اور نکسلائیٹس کے مابین تصادم ہوا۔ پولیس کی اطلاع کے مطابق تھانے سے صبح خصوصی ٹاسک فورس اور سنٹرل ریزرو پولیس فورس کے جوانوں کا مشترکہ دستہ گشت کیلئے نکلا تھا۔ تبھی راناپال گاؤں کے گھنے جنگلوں میں گھات لگا کر بیٹھے نکسلائیٹس نے اچانک فائرنگ شروع کر دی‘جوانوں نے فائرنگ کا جواب دیا۔ کونڈاگاؤں پولیس سپرنٹنڈنٹ آشوتوش سنگھ نے تصادم کی توثیق کی ۔

TOPPOPULARRECENT