Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / کودانڈار رام کانگریس کے ہاتھوں کٹھ پتلی ۔ ٹی آر ایس

کودانڈار رام کانگریس کے ہاتھوں کٹھ پتلی ۔ ٹی آر ایس

جے اے سی کی قیادت بھی چندر شیکھر راؤ نے دی تھی ۔ پارٹی رکن پارلیمنٹ بی سمن
حیدرآباد۔ 4؍ ڈسمبر ( سیاست نیوز)  صدرنشین تلنگانہ پولیٹیکل جوائنٹ ایکشن کمیٹی پروفیسر ایم کودنڈا رام پر ٹی آر ایس ایم پی مسٹر بی سمن نے تنقید کرتے ہوئے کہا کہ کودنڈا رام کانگریس کے ہاتھوں کٹھ پتلی بن گئے ۔ انہوں نے باوجودیاد دلایا کہ تلنگانہ جدوجہد کے موقع پر اہم موضوعات و ذمہ داریاں صدر ٹی آر ایس مسٹر چندرشیکھرراؤ نے پروفیسر کو دنڈا رام کے تفویض کئے تھے ۔ مسٹر سمن نے کہا کہ چندرشیکھرراؤ کے فرزند کے ٹی راماراؤ وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی نے امریکہ میں عیش و عشرت ـکی زندگی کو خیر باد کر کے علحدہ تلنگانہ جدوجہد میں سرگرم حصہ لیا تھا ۔ رکن پارلیمان نے کہاکہ مسٹر  کے ٹی راماراؤ کو عوام نے تین مرتبہ ووٹ دے کر شاندار کامیابی دلائی تھی انہوں نے کہا کہ چندرشیکھرراؤ کی جدوجہد کے نتیجہ میں آج علحدہ تلنگانہ کی تشکیل ممکن ہوسکی اور کہا کہ ایسے قائد کے خلاف تنقیدوں کیلئے پروفیسرکودنڈا رام کو کون اکسا رہے ہیں ان تمام سے بھی وہ بخوبی واقف ہیں ۔ ٹی آر ایس ایم پی نے دریافت کیا کہ آیا کے ٹی آر کو تنقید کا نشانہ بنانے کی پروفیسر کودنڈارام حیثیت رکھتے ہیں ۔ انہیں چندرا شیکھرراؤ جے اے سی صدرنشین منتخب کرنے تک ان کا کیا موقف تھا اس سے عوام بخوبی واقف ہیں ۔ انہوں نے دریافت کیا آیا کودنڈا رام کو حکومت کے مختلف اقدامات دکھائی نہیں دے رہے ہیں ۔ رکن پارلیمان مسٹر بی سمن نے کانگریس کو نشانہ بنایا اور کہا کہ آج تلنگانہ میں کانگریس کا کوئی وجود نہیں ہے بلکہ وہ وینٹیلیٹر پر پہونچ گئی ہے ۔ انہوں نے کارگذار صدر تلنگانہ تلگودیشم و رکن اسمبلی ریونت ریڈی پر تنقید کی اور انہیں چور قرار دیا اور کہا کہ تلنگانہ عوام انہیں بہت جلد سبق سکھائیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT