Tuesday , August 22 2017
Home / Top Stories / کولکتہ میں زیر تعمیر فلائی اوور منہدم ۔ 22 ہلاک

کولکتہ میں زیر تعمیر فلائی اوور منہدم ۔ 22 ہلاک

88 زخمی ۔ کئی افراد کے ملبہ میں پھنسے رہنے کا اندیشہ ‘ چیف منسٹر ممتابنرجی نے مقام کا دورہ کیا

کولکتہ 31 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) کولکتہ میں آج ایک زیر تعمیر فلائی اوور برج کا کچھ حصہ منہدم ہوگیا جس کے نتیجہ میں کم از کم 22 افراد ہلاک اور دوسرے 88 زخمی ہوگئے ہیں۔ کچھ افراد ملبہ کے نیچے ہنوز دبے ہیں اور ہلاکتوں کی تعداد میں اضافہ بھی ہوسکتا ہے ۔ پولیس ذرائع نے بتایا کہ اس حادثہ میں 22افراد ہلاک ہوئے ہیں جبکہ کئی دوسرے زخمی ہیں۔ تحقیقات کا حکم بھی دے دیا گیا ہے ۔ کہا گیا ہے کہ کچھ افراد کو ملبہ کے نیچے سے نکالا گیا ہے اور انہیں شہر میں مختلف دواخانوں کو منتقل کیا گیا ہے ۔ کولکتہ میڈیکل کالج و ہاسپٹل کے سپرنٹنڈنٹ سیکھا بنرجی نے کہا کہ یہاں دو افراد کو مردہ لایا گیا تھا اور دو افراد کی حالت انتہائی تشویشناک ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مزید زخمیوں کو دواخانہ لایا جا رہا ہے چیف منسٹر ممتابنرجی مغربی مدناپور میں کیمپ کی ہوئی تھیں۔ وہاں انہوں نے اپنا دورہ مختصر کرتے ہوئے شہر پہونچ گئی ہیں اور انہوں نے حادثہ کے مقام کا دورہ کیا ۔ انہوں نے حکام کو ہدایت دی کہ وہ یہاں امداد و بچاؤ کاموں میں تیزی پیدا کریں۔ اس کام کیلئے پولیس ‘ فائر بریگیڈ اور ڈیزاسٹر مینجمنٹ عملہ کی خدمات حاصل کی جا رہی ہیں۔ کہا گیا ہے کہ ملبہ میں کئی مسافر بردار گاڑیاں بشمول ایک بس بھی پھنس گئی تھی ۔ ملبہ کے نیچے پھنسے ہوئے افراد کو نکالنے اور گاڑیوں کو ہٹانے کی کوششیں شروع کردی گئی ہیں۔ بھاری کرینس اور دوسری بچاؤ گاڑیںو کو یہاں مصروف کردیا گیا ہے

تاکہ ملبہ صاف کرتے ہوئے اس کے نیچے پھنسے ہوئے افراد کو باہر نکالا جاسکے ۔ جائے حادثہ پر موجود صحافیوں نے بتایا کہ یہاں بے شمار افراد شدید زخمی حالت میں ہیں اور وہ خون میں لت پت حالت میں پڑے ہیں۔ کچھ افراد کے گاڑیوں میں دبے رہنے اور کنکریٹ و بھاری فولادی سامان کے نیچے پھنسے ہوئے رہنے کے اندیشے ہیں ۔ یہ واقعہ دوپہر کے قریب مصروف ترین راببدرا سرانی ٹیگور اسٹریٹ کراسنگ پر ہرا بازار کے قریب پیش آیا جو تجارتی مرکز ہے۔ فلائی اوور کے نیچے کئی ہاکرس کاروبار کرتے ہیں اور گاڑیوں کی پارکنگ کیلئے بھی استعمال کیا جاتا ہے ۔ این ڈی آر ایف عملہ جائے حادثہ پر پہونچ گیا ہے اور بچاؤ کاموں میں حصہ لے رہا ہے ۔ حکومت نے بچاؤ اور امدادی کاموں میں فوج کی مدد طلب کی ہے جس کے چار کالمس بچاؤ کاموں میں جٹ گئے ہیں۔ ہر کالم میں تین میڈیکل ٹیمیں ‘ دو ایمبولنس اور سرجنس وغیرہ بھی ہیں۔ فوج کے انجینئرس کی ایک ٹیم بھی جائے حادثہ پر پہونچ گئی ہے ۔ کہا گیا ہے کہ فلائی اوور کے نیچے ایک ٹریفک پولیس بوتھ تھا جس میں موجود پولیس ملازمین کے محفوظ ہیں۔

بریج کے انہدام پر نریندر مودی کا اظہار رنج
نئی دہلی 31 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیراعظم نریندر مودی نے آج چیف منسٹر مغربی بنگال ممتا بنرجی سے فلائی اوور کے انہدام کی وجہ سے پیدا ہونے والی صورتحال پر بات چیت کی ۔ وہ امریکہ کے دورہ پر ہیں ۔ انہوں نے اس سانحہ پر اظہار رنج کرتے ہوئے تیقن دیا کہ ریاستی حکومت کو مرکز سے ہرممکن مدد دی جائے گی ۔ وزیراعظم کے دفتر سے آج جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ زیرتعمیر فلائی اوور کا ایک حصہ کولکتہ کے برا  بازار میں منہدم ہوگیا جس سے عوام اور موٹر کاروں کو نقصان پہونچا ۔ وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے آج وزیر اعظم نریندر مودی کو کولکتہ میں زیر تعمیر فلائی اوور بریج کے انہدام سے واقف کروایا ۔
مودی فی الحال امریکہ میں ہیں۔ سنگھ نے اپنے ٹویئیٹر پر کہا کہ مودی سے انہوں نے فون پر بات چیت کی اور انہیں کولکتہ میں برج کے انہدام کے بعد جاری بچاؤ کاموں سے واقف کروایا ۔ وزیراعظم نریندر مودی فی الحال بیرونی دورہ پر ہیں ۔ وہ بلجیم میں چوٹی کانفرنس میں شرکت کے بعد امریکہ میں نیوکلیئر صیانتی چوٹی کانفرنس میں شرکت کیلئے امریکہ روانہ ہوگئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT