Friday , September 22 2017
Home / ہندوستان / کولکتہ میں یوم جمہوریہ ریہرسل کے دوران دلخراش حادثہ

کولکتہ میں یوم جمہوریہ ریہرسل کے دوران دلخراش حادثہ

ممنوعہ علاقہ میں تیز رفتار کار کی ٹکر سے ایرفورس کا عہدیدار ہلاک
کولکتہ ۔ 13 جنوری ۔(سیاست ڈاٹ کام) یوم جمہوریہ ریہرسل کے دوران آج ایک ایرفورس آفیسر سابقہ آر جے ڈی رکن اسمبلی محمد سہراب کے فرزند کی تیز رفتار کار کی ٹکر سے برسرموقع ہلاک ہوگئے جبکہ یہ کار بیراکڈس ( رکاوٹوں) کو توڑکر ریہرسل کے مقام تک پہنچ گئی تھی ۔ ایک نئے برانڈ کی سفید ادی کار آج صبح 6:30 بجے تین مقامات پر بیراکڈس کو توڑتے ہوئے پریڈ ریہرسل میں گھس گئی اور 21 سالہ ایرفورس عہدیدار ابھمنیو گوڑ کو ٹکر ماری جوکہ اس وقت ایرفورس ڈرل انسٹرکٹر کی حیثیت سے پریڈ کی نگرانی کررہے تھے ۔ یہ سڑک عموماً صبح کے اوقات ریہرسل کے دوران بند کردی جاتی ہے لیکن ایک تیز رفتار کار اچانک ممنوعہ علاقہ میں داخل ہوکر آفیسر کو ٹکر ماردی اور انھیں گھسیٹتے ہوئے دوسرے بیراکڈ کو ٹکر مارنے کے بعد روک گئی ۔ وزارت دفاع کے ترجمان نے بتایا کہ ایرفورس عہدیدار کو شدید زخمی حات میں ایسٹرن کمانڈ ہاسپٹل سے فی الفور رجوع کیا گیا جہاں پر بعد معائنہ انھیں مردہ قرار دیدیا گیا جبکہ اس حادثہ کے بعد ڈرائیور کار چھوڑکر فرار ہوگیا تھا ۔ دریں اثناء چیف منسٹر مغربی بنگال ممتا بنرجی نے ایرفورس عہدیدار کی موت کو بدبختانہ قرار دیتے ہوئے اس حادثہ کے قصوروار کے خلاف سخت کارروائی کا حکم دیا۔ ہاسپٹل میں سوگوار خاندان سے ملاقات کے بعد ممتا بنرجی نے کہاکہ سڑک پر رکاوٹوں کے باوجود تیز رفتاری کے ساتھ ممنوعہ علاقہ میں داخل ہونے پر ڈرائیور کی ذہنی حالت پر شبہ ہوتا ہے ۔ یہ ایک سنگین معاملہ ہے اور قصوروار کو ہرگز بخشا نہیں جائے گا اگرچیکہ اس واقعہ میں کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی لیکن کولکتہ پولیس کو کار کے اندر ایک چالان دستیاب ہوا ہے

جس میں شوروم کا پتہ اور گاڑی کے مالک کی تفصیلات درج ہے ۔ یہ کار سابق آر جے ڈی رکن اسمبلی محمد سہراب کی کمپنی کے نام پر رجسٹرڈ ہے اور 4 جنوری کو سہراب کے فرزند انبیاء سہراب نے 90 لاکھ روپئے میں خریدی ہے ۔ کولکتہ پولیس کی ٹیم نے سہراب اور ان کے والد سے موبائیل فون پر ربط قائم کرنے کی کوشش کی ہے لیکن یہ فونس بند کردیئے گئے ہیں، حتیٰ کہ ان کے مکانات بھی مقفل پائے گئے۔ تاہم یہ واضح نہیں ہوسکا کہ حادثہ کے وقت ڈرائیونگ کون کر رہے تھے جس کیلئے سی سی ٹی وی فوٹیج کا تجزیہ کیا جارہا ہے ۔ حادثہ کے بعد ڈرائیور نے چالاکی کا مظاہرہ کرتے ہوئے گاؤں کے عارضی رجسٹریشن نمبر جو کہ ایک کاغذ پر تحریر تھا، مسخ کردیا اور کار میں شراب کو بھی چھپانے کیلئے پرفیوم بھی مارا لیکن پولیس کو گاؤں میں سے ایک چالان دستیاب ہوا جس سے پولیس کو ایک اہم سراغ مل گیا جس میں گاڑیوں کے شوروم اور کار کے مالک کی تفصیلات درج ہے ، اس طرح پولیس کو ایک اہم سراغ مل گیا جس کی بنیاد پر تحقیقات میں پیشرفت ہوئی ہے اور توقع ہے کہ بہت جلد یہ معملہ حل کرلیا جائے گا کہ ڈرائیور کی ذہنی حالت اور تیز رفتاری سے گاؤں چلانے کی وجہ کیا تھی۔

خطرناک مکھیوں کے حملہ میں ایک شخص ہلاک
جئے پور ۔ 13 ۔ جنوری : ( سیاست ڈاٹ کام ) : راجستھان کے ضلع باران میں آخری رسومات کے دوران زہریلی مکھیوں کے حملہ میں ایک 45 سالہ شخص فوت اور دیگر 15 افراد زخمی ہوگئے ۔ یہ واقعہ کلونی گاؤں میں پیش آیاجہاں پر ایک شخص جانکی لال نہتا کی آخری رسومات ادا کی جارہی تھی ۔ مہتا کے پوترے 45 سالہ نندکشور مکھیوں کی ڈنک سے شدید زخمی ہوگئے ۔ انہیں ہاسپٹل منتقل کرنے پر جانبر نہ ہوسکے دیگر 15 زخمیوں کا علاج جاری ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT