Friday , August 18 2017
Home / ہندوستان / کوٹہ کیلئے احتجاج‘ گجرات ماڈل کی ناکامی کا مظہر: سی پی آئی ایم

کوٹہ کیلئے احتجاج‘ گجرات ماڈل کی ناکامی کا مظہر: سی پی آئی ایم

ہریانہ کے جاٹ طبقہ کا تحفظات کیلئے احتجاج شروع کرنے کا اعلان
نئی دہلی۔27اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) سی پی آئی ایم نے آج بی جے پی پر درپردہ تنقید کرتے ہوئے کہا کہ گجرات میں کوٹہ کیلئے احتجاج سے یہ ثابت ہورہا ہے کہ وہاں گجرات ماڈل بری طرح ناکام ہوا ہے ۔ سی پی آئی ایم نے کہا کہ گجرات کی نام نہاد ترقی کا ہوا  یہ ثابت کرتاہے کہ حکومت ناکام ہوئی ہے ۔ تشدد کی مذمت کرتے ہوئے جس میں اب تک 9افراد ہلاک ہوئے ہے ۔ سی پی آئی ایم نے یہ سوال کیا کہ آخر پولیس نے صورتحال سے نمٹنے کیلئے طاقت کا استعمال کیوں کیا ۔ پولیس نے کوٹہ کیلئے جاری احتجاج کو اس ڈھنگ سے نمٹا کہ جس سے صورتحال مزید جارحانہ رخ اختیار کرلی ۔ سی پی آئی ایم نے گجرات میں فوری امن کی بحالی کیلئے زور دیا ۔ کوٹہ کے لئے عوام کے احتجاج کو صرف ایک طبقہ کی بھلائی کیلئے دوسرے طبقہ کو نقصان پہنچانے کیلئے استعمال نہیں کرنا چاہیئے‘

جب تک کسی بھی ریاست میں متوازی ترقی نہیں ہوگی عوام کے طبقات میں اس طرح بے چینی برقرار ہوگی ۔  چندی گڑھ سے موصولہ اطلاع کے بموجب گجرات میں کوٹہ کے لئے پٹیل طبقہ کے مطالبہ کی حمایت کرتے ہوئے ہریانہ میں جاٹ طبقہ نے آج دھمکی دی ہے کہ وہ بھی او بی سی کوٹہ کیلئے اپنے مطالبہ پر زور دینے ریاست میں ایجی ٹیشن شروع کرے گا ۔ آل انڈیا جاٹ آرکھشن سنگھرش سمیتی ہریانہ کے صدرہارم سنگھ سنگون نے کہا کہ ہریانہ میں جاٹ کی جانب سے آئندہ ماہ احتجاج شروع کیا جائے گا اور یہ احتجاج پُرامن ہوگا ۔ سابق ہوڑا حکومت نے 2013ء میں جاٹ طبقہ کو خصوصی پسماندہ طبقہ کا موقف دیا تھا ۔ اس فیصلہ کو گذشتہ ماہ پنجاب اور ہریانہ ہائیکورٹ نے روک دیا ہے ۔ انہوں نے گجرات کے علاقوں میں احتجاجیوں کے خلاف پولیس کارروائی کی مذمت کی اور کہا کہ ہر ایک کو اس جمہوری ملک میں اپنے حق کیلئے آواز اٹھانے کا حق حاصل ہے ۔ گجرات میں کل ہونے والے تشدد میں 8افراد ہلاک ہوئے ہیں ۔ حکومت نے پٹیل برادری کے احتجاج کے بعد فوج کو طلب کیا تھا اور یہاں کرفیو بھی نافذ کردیا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT