Tuesday , August 22 2017
Home / اضلاع کی خبریں / کوڑنگل میں حیوانات کا علاج و معالجہ مشکل

کوڑنگل میں حیوانات کا علاج و معالجہ مشکل

دیہی مقامات پر ڈاکٹروں کا فقدان۔ کسان برادری میں سخت مایوسی

کوڑنگل۔/11اکٹوبر، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) حلقہ اسمبلی کوڑنگل میں ان دنوں حیوانات کا علاج و معالجہ ملازمین کے صوابدید پر منحصر ہوکر رہ گیا ہے۔ دیہی مقامات پر مویشیوں کا بروقت صحیح علاج نہ ہونے سے کسان برادری میں سخت مایوسی پائی جاتی ہے۔ ایک جانب حکومت گھریلو صنعتوں کے فروغ کے لئے مویشی فراہم کرتی ہے مگر ان کی صحیح دیکھ بھال اور ضروری ادویات کی فراہمی نہیں ہوپاتی۔ بیشتر کسانوں کا استدلال ہے کہ برقت عدم طبی سہولت کی بناء مویشیوں کی ہلاکت کی نوبت آرہی ہے۔ حلقہ اسمبلی کوڑنگل پانچ منڈلوں کوڑنگل، کوسگی، مدور، دولت آباد اور بمرس پیٹ پر مشتمل ہے۔ ہر منڈل مستقر کے علاوہ بیشتر دیہی مقامات پر بھی حیوانات کے علاج کیلئے دواخانے قائم کئے گئے ہیں۔بہتر سے بہتر طبی سہولتیں بہم پہنچانے کیلئے دواخانوں کو کمپیوٹر فراہم کرتے ہوئے انٹرنیٹ سے مربوط کیا گیا ہے۔ مگر کہیں بھی ان عصری آلات کا استعمال صحیح ڈھنگ سے نہیں ہورہا ہے۔ مویشیوں کی کثیر تعداد ہونے کے باوجود بھی ان کی طبی نگہداشت کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔ مذکورہ پانچ منڈلوں کے مستقر کے علاوہ دولت آباد منڈل میں نمائندہ مواضعات، بالم پیٹ، گوکا فصلواد، نیشور میں سب سنٹر قائم ہے مگر خاطر خواہ عملے کے ارکان نہ ہونے سے مذکورہ سنٹرز برائے نام کارکرد ہیں۔ کوسگی منڈل میں حیوانات کے ڈاکٹر نہ ہونے سے دولت آباد کے ڈاکٹر کو زائد ذمہ داری سونپی گئی ہے۔ کوسگی مستقر کے علاوہ چندراونچا اور گڑمال میں دو سب سنٹر قائم ہیں جہاں پر صرف اٹنڈر ہی کارگزار ہیں۔ یہی صورتحال دیگر منڈلوں کی بھی ہے۔ ارباب مجاز سے کسانوںکامطالبہ ہے کہ ضروری عملے کی تعیناتی عمل میں لائیں۔

TOPPOPULARRECENT