Monday , September 25 2017
Home / جرائم و حادثات / کوکٹ پلی قتل کیس کے چھ ملزمین گرفتار

کوکٹ پلی قتل کیس کے چھ ملزمین گرفتار

قتل کو حادثہ قرار دینے پر پولیس کی تحقیقاتی کارروائی
حیدرآباد /25 جولائی ( سیاست نیوز ) شیخ جابر کی حادثاتی موت نے ایک نیا موڑ اختیار کرلیا ہے ۔ کوکٹ پلی ہاوزنگ بورڈ پولیس نے 32 سالہ شیخ جابر کی حادثاتی موت پر سے راز کے پردہ کھول دئے ہیں اور اس موت کو قتل ثابت کرتے ہوئے 6 افراد بشمول ایک روڈی شیٹر کو گرفتار کرلیا ہے ۔ انسپکٹر کے پی ایچ بی مسٹر کشالکر نے شک کی بنیاد پر جامع تحقیقات کرتے ہوئے اس واقعہ کی حقیقت کو منظر عام پر لایا۔ انہوں نے بتایا کہ 3 جولائی کو جابر متوطن ضلع گنٹور شدید زخمی ہوگیا تھا اور 14 جولائی کو فوت ہوگیا جابر سے قتل کا اصل ملزم رویندر ریڈی نے جھگڑا کیا تھا ۔ جس کے بعد عمران اور عبدالسعید تینوں نے ملکر شیخ جابر کو مبینہ طلب کیا اور کوکٹ پلی ہاوزنگ بورڈ کے فیس III علاقہ میں لے گئے اور سنسان علاقہ میں شیخ جابر کو مبینہ شدید زدوکوب کیا ۔ اس دوران یہ شخص بے ہوش ہوگیا۔ تینوں نے جابر کو اس کے رشتہ داروں کے حوالے کردیا اور بتایا کہ بس میں سفر کی کوشش کے دوران جابر بس سے گر کر شدید زخمی ہوگیا ۔ جس کو ہاسپٹل منتقل کیا گیا جہاں علاج کے دوران وہ فوت ہوگیا ۔ تاہم اس وقت پولیس نے مشتبہ حالت میں موت کا مقدمہ درج کیا اور انسپکٹر کو اس معاملہ پر شبہ تھا ۔ ہاسپٹل منتقل کرنے اور بس سے گرنے کے واقعات کو ایک کہانی تصور کرتے ہوئے انسپکٹر مسٹر کشالکر نے اپنے طور پر تحقیقات کا آغاز کیا اور معاملہ کی حقیقت کو منظر عام پر لاتے ہوئے 6 افراد کو گرفتار کرلیا ۔ رویند رریڈی ، عمران اور سعید کو روڈی شیٹر سری رام ، سنتوش اور تلسی کانت نے سہارا دیا اور قتل کے اس معاملہ کو حادثاتی موت قرار دینے کی کہانی رچی اور پولیس میں اطلاع اس پر سے غلط باور کی گئی تاہم پولیس نے انہیں گرفتار کے مصروف تحقیقات ہے ۔

TOPPOPULARRECENT