Thursday , July 27 2017
Home / کھیل کی خبریں / کوہلی پر مہمان عہدیدار کو بوتل سے مارنے کا الزام

کوہلی پر مہمان عہدیدار کو بوتل سے مارنے کا الزام

رانچی۔11 مارچ (سیاست ڈاٹ کام ) ایک ایسے موقع پر جب ہندوستان اور آسٹریلیا کے درمیان دوسرے ٹسٹ میچ میں پیدا ہونے والے تنازعات کی باز گشت کم ہوتی نظر آ رہی تھی کہ آسٹریلیائی اخبار نے ہندوستانی کپتان ویراٹ کوہلی پر الزام عائد کر کے ایک نیا تنازعہ کھڑا کردیا ہے۔آسٹریلیائی اخبار ڈیلی ٹیلی گراف نے کپتان کوہلی اور کوچ انیل کمبلے پر بنگلورو ٹسٹ میں خراب رویہ اختیار کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔اخبار نے دعویٰ کیا کہ غصے میں کوہلی نے میچ کے دوران آسٹریلیائی عہدیدارکی جانب انرجی ڈرنگ کی بوتل کھینچ کر ماری اور اس دوران ان کے بالکل پیچھے موجود کوچ انیل کمبلے کٹھ پتلی بنے بیٹھے رہے۔یاد رہے کہ ہندوستان اور آسٹریلیا کے درمیان دوسرے ٹسٹ میچ میں دونوں ٹیموں کی جانب سے ایک دوسرے پر فقرے بازی سے تنازعات کا آغاز ہوا لیکن یہ معاملہ اس وقت شدت اختیار کر گیا جب دوسری اننگز میں ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہونے پر اسٹیون اسمتھ نے ریویو لینے سے قبل اپنے ڈریسنگ روم کی جانب دیکھا جہاں انہیں مبینہ طور پر ڈی آری ایس میں مدد لینے کا مرتکب قرار دیا گیا۔ ڈی ار ایس میں بیٹسمین دوسرے سرے پر موجود کھلاڑی سے مدد لے سکتا ہے لیکن گراؤنڈ سے باہر موجود کسی بھی عہدیدار یا کھلاڑی سے مدد لینا کھیل کے قوانین کے خلاف ہے۔اخبار نے کہا کہ آسٹریلیا کی دیانتداری پر سوالات اٹھانے والے کوہلی اپنی جارحانہ مہم میں اس حد تک آگے نکل گئے کہ انہوں نے مہمان عہدیدار کو نارنجی رنگ کی بوتل کھینچ ماری لیکن ’منکی گیٹ‘ اسکینڈل کے اہم محرک اور ہندوستانی ٹیم کے موجودہ کوچ انیل کمبلے دوبارہ اپنا کردار ادا کرتے ہوئے سب کچھ دیکھنے کے باوجود کٹھ پتلی بنے رہے۔رپورٹ میں کوہلی پر مزید الزام عائد کرتے ہوئے کہا گیا کہ ہندوستان کے کپتان نے پیٹر ہینڈزکومب کے دوسری اننگز میں آؤٹ ہونے کے بعد نازیبا اشارے کئے اور انہوں نے کھیل کی روح کو نقصان پہنچایا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT