Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / کوہلی کی ڈبل سنچری ‘ رہانے کی سنچری ‘ ہندوستان 557/5 پر اننگز ڈیکلیر

کوہلی کی ڈبل سنچری ‘ رہانے کی سنچری ‘ ہندوستان 557/5 پر اننگز ڈیکلیر

چوتھی وکٹ کیلئے ریکارڈ 365 رنز کی رفاقت ۔ اندور ٹسٹ میں میزبان ٹیم کا موقف انتہائی مستحکم ۔ مہمان بولرس پوری طرح بے بس۔ نیوزی لینڈ 28/0

اندور 9 اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان نے مہمان نیوزی لینڈ کے خلاف تیسرے کرکٹ ٹسٹ کے دوسرے دن بلے بازی کا بہترین مظاہرہ کرتے ہوئے پانچ وکٹس کے نقصان پر 557 کا اسکور کھڑا کرکے اپنی اننگز ڈیکلر کردی ۔ ہندوستانی کے کپتان ویراٹ کوہلی نے بہترین بیٹنگ کرتے ہوئے ڈبل سنچری اسکور کی جبکہ ایک اور بلے باز اجنکیا رہانے بھی نیوزی لینڈ کے بولرس کی خوب پٹائی کرنے کے بعد 188 کے اسکور پر آوٹ ہوگئے ۔ وہ 12 رن کی کمی سے اپنی ڈبل سنچری سے محروم رہ گئے ۔ کوہلی نے بہترین بیٹنگ کرتے ہوئے اپنے ٹسٹ کیرئیر کا بہترین اسکور 211 کیا ۔ اجنکیا رہانے نے ان کی اچھی مدد کی اور دونوں بلے بازوں نے مل کر نیوزی لینڈ کے بولرس کی جم کر پٹائی کی ۔ ہندوستان نے اس اسکور کے ساتھ بہترین موقف حاصل کرلیا جبکہ پچ سے اشارے مل رہے ہیں کہ یہ وقت گذرتے ہوئے بیٹنگ کیلئے مشکل ہوتی جائیگی ۔ آج کا کھیل ختم ہونے تک نیوزی لینڈ نے اپنی پہلی اننگز میں کسی وکٹ کے بغیر 28 رن بنالئے تھے ۔ مارٹن گپٹل 17 اور ٹام لاتھم 6 رن بناکر کھیل رہے تھے ۔ کوہلی نے آج اپنی ڈبل سنچری کی تکمیل کے دوران 20 چوکے لگائے جبکہ رہانے نے بھی بہترین بلے بازی کی اور انہوں نے اپنے 188 کے اسکور میں 4 چھکے اور 18چوکے لگائے ۔ کوہلی اور رہانے نے چوتھی وکٹ کی رفاقت میں ریکارڈ 365 کا اسکور بنایا ۔ یہ چوتھی وکٹ کیلئے ہندوستان کی جانب سے کسی بھی ٹیم کے خلاف اعظم ترین اسکور ہے ۔

جب ویراٹ کوہلی نے آج کا کھیل ختم ہونے سے نصف گھنٹہ قبل ہندوستانی اننگز کو پانچ وکٹس کے نقصان پر 557 رن پر ڈیکلر کردیا اس وقت روہت شرما 51 رن بناکر اور رویندر جڈیجہ 17 رن بناکر کھیل رہے تھے ۔ دونوں بلے بازوں نے آخری وقتوں میں تیز رفتار بیٹنگ کی اور انہوں نے 59 گیندوں میں 53 رن بنائے ۔ روہت شرما کی یہ جاریہ سیریز میں مسلسل تیسری نصف سنچری تھی ۔ انہوںنے دو چھکے اور تین چوکے لگائے ۔ آج کا دن تاہم ویراٹ کوہلی کے نام رہا جنہوں نے اپنے سابقہ اعظم ترین اسکور 200 کو پار کرلیا ۔ کوہلی نے ویسٹ انڈیز کے خلاف نارتھ ساؤنڈ میں 200 رن بنائے تھے ۔

کوہلی کا اب تک کا اعظم ترین اسکور 147 رنوں کا تھا جو انہوں نے آسٹریلیا کے خلاف ملبورن میں بنائے تھے ۔ چھ ٹسٹوں اور تین مہینوں کے وقفہ میں ویراٹ کوہلی کی یہ دوسری ڈبل سنچری ہے ۔ دونوں بلے بازوں نے بآسانی اسکور کو یقینی بنایا تھا اور نیوزی لینڈ کے بولرس ان کے آگے بے بس نظر آ رہے تھے ۔ یہی وجہ رہی کہ دونوں بلے بازوں نے لنچ کے بعد کے سشن میں 30 اوورس میں 98 رنز جوڑے تھے ۔ ہندوستان نے آج صبح کل کے اسکور تین وکٹس پر 267 رنوں کے آگے کھیلنا شروع کیا تھا ۔ لنچ سے قبل 91 رن جوڑے تھے ۔ دونوں ہی بلے بازوں نے مہمان ٹیم کے بولرس کا بآسانی سامنا کیا

اور انہیں بیٹنگ میں کسی طرح کی مشکل پیش نہیں آ رہی تھی ۔ دونوں بلے باز کل صبح لنچ کے بعد کے سشن میں یکجا ہوئے تھے اور انہوں نے آج تک اس کا تسلسل جاری رکھا تھا ۔ جیتن پٹیل نے کوہلی اور رہانے کی یہ رفاقت توڑی جب انہوں نے کوہلی کو ایل بی ڈبلیو آوٹ کیا ۔ کوہلی چائے کے وقفہ کے بعد پہلے اوور میں فلک کرنے کی کوشش میں آوٹ ہوگئے ۔ اس وقت ہندوستان کا اسکور 465 تک پہونچ گیا تھا ۔ کوہلی 539 منٹ تک کریز پر رہے ۔ وہ پہلے ہندوستانی بلے باز ہیں جنہوں نے اپنے کیرئیر میں دوسری مرتبہ ڈبل سنچری اسکور کی ہے ۔ دونوں نے سچن تنڈولکر اور وی وی ایس لکشمن کا اس سے قبل کا چوتھی وکٹ کی رفاقت کا ریکارڈ بھی توڑ دیا جو 353 رنوں کا تھا ۔ سچن اور لکشمن نے یہ ریکارڈ سڈنی میں آسٹریلیا کے خلاف 2004 میں بنایا تھا ۔ رہانے بھی  کوہلی کے بعد زیادہ دیر وکٹ پر نہیں رہ سکے اور وہ ٹرینٹ بولٹ کی گیند پر وکٹ کیپر کو کیچ دے بیٹھے ۔ انہوں نے 514 منٹ کریز پر گذارے ۔ وہ اپنے کیرئیر کی پہلی ڈبل سنچری سے 12 رنوں کی کمی سے محروم رہ گئے ۔ اجنکیا رہانے کی یہ اپنے 29 ویں ٹسٹ میںآٹھویں سنچری تھی ۔ نیوزی لینڈ کی جانب سے تمام بولرس کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا تھا اور وہ ہندوستانی بلے بازوں پر اثر انداز نہیں ہو پائے ۔ وہ رنوں کو بھی روکنے میں ناکام رہے ۔

TOPPOPULARRECENT