Wednesday , June 28 2017
Home / کھیل کی خبریں / کپتان ویراٹ کی ماہرانہ اننگز ، انڈیا کا موقف مستحکم 451/7

کپتان ویراٹ کی ماہرانہ اننگز ، انڈیا کا موقف مستحکم 451/7

India's captain Virat Kohli plays a shot on the third day of the fourth Test cricket match between India and England at the Wankhede stadium in Mumbai on December 10, 2016. / AFP PHOTO / Punit PARANJPE / ----IMAGE RESTRICTED TO EDITORIAL USE - STRICTLY NO COMMERCIAL USE----- / GETTYOUT

ممبئی ٹسٹ میں وجئے کی بھی سنچری
انگلینڈ کے معین و عادل کی پٹائی

ممبئی ، 10 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) کیپٹن ویراٹ کوہلی نے پھر ایک بار شاندار ناٹ آؤٹ سنچری کے ذریعے اپنی مہارت ثابت کردی، جیسا کہ انھوں نے ہندوستان کو انگلینڈ کے خلاف یہاں جاری چوتھے کرکٹ ٹسٹ کے آج تیسرے دن کھیل کے اختتام تک 451/7 کے مستحکم موقف تک پہنچا دیا ہے۔ کوہلی کے 147 رنز جو اُن کی 15 ویں ٹسٹ سنچری ہے، اور کچھ اسی طرح مرلی وجئے کی پُراعتماد سنچری (136) نے ہندوستان کو انگلینڈ کے 400 کے جواب میں اپنی پہلی اننگز کی سبقت کو 51 رنز تک وسعت دینے میں مدد کی۔ کوہلی اور نئے نئے ٹسٹ کرکٹر جینت یادو (30*) کے درمیان آٹھویں وکٹ کیلئے 87 رنز کی غیرمختتم رفاقت کا توقع ہے اس میچ کے نتیجے پر نمایاں اثر پڑنے والا ہے۔ تاہم آج کا دن بلاشبہ کوہلی کے نام رہا، جو بڑی سرعت کے ساتھ ہر فارمٹ میں انڈیا کے نئے ’ریکارڈساز کھلاڑی‘ بنتے جارہے ہیں۔ وانکھیڈے اسٹیڈیم کی ایسی وکٹ پر جہاں دھیمی رفتار والے بولروں کو قابل لحاظ گھماؤ اور باؤنس حاصل ہورہا ہے، اعلیٰ معیاری ٹسٹ بیٹنگ کا مظاہرہ پیش کرتے ہوئے کوہلی نے وکٹ پر لگ بھگ چھ گھنٹے (359 منٹ) گزارے، جو ہفتہ کی شام اسٹیڈیم میں بھرپور کراؤڈ کیلئے یادگار موقع ثابت ہوگیا۔ اپنی سنچری کی تکمیل کے دوران کوہلی نے ایک کیلنڈر سال میں 1000 ٹسٹ رنز مکمل کرلئے اور پانچ روزہ فارمٹ میں 4000 رنز کا شخصی سنگ میل بھی پورا کرلیا۔ 15 ویں ٹسٹ سنچری نے انھیں ماضی کے اسٹار گنڈپا وشواناتھ کی 14 سنچریوں سے بھی آگے پہنچا دیا ہے۔ 241 گیندوں کی اننگز 17 باؤنڈریوں سے مزین ہے۔ جینت کے ساتھ اپنی پارٹنرشپ کے علاوہ کوہلی دن کے دیگر سنچورین وجئے کے ساتھ 116 رنز کی رفاقت میں بھی شامل رہے۔ وجئے نے 282 گیندوں پر مشتمل اپنی صبرآزما سعی میں 10 چوکے اور تین چھکے لگائے۔ یہ وجئے کی 8 ویں سنچری ہے، اور بروقت درج ہوئی کیونکہ وشاکھاپٹنم اور موہالی میں وہ متواتر ناکام ہوئے تھے۔ اگر کوہلی اور جینت اتوار کو اسی انداز میں کھیلیں تو سبقت 100 رنز سے متجاوز ہوسکتی ہے، جو انگلش بیٹسمنوں کیلئے بڑی دباؤ والی صورتحال ہوجائے گی کیونکہ انھیں میچ کی تیسری اننگز میں روی چندرن اشوین اور رویندر جڈیجا کا سامنا رہے گا جو عین ممکن ہے آسان نہ ہوگا۔ جہاں تک آج انگلینڈ کی کوششوں کا معاملہ ہے، اسپنرز معین علی (2/139)، عادل رشید (2/152) اور جو روٹ (2/18) سے کپتان السٹیر کک نے کافی محنت کرائی۔ تینوں نے مل کر سات کے منجملہ چھ ہندوستانی وکٹیں ضرور لئے مگر خاص طور پر وجئے اور کوہلی نے معین اور عادل کو اعتماد کے ساتھ کھیلا اور ہر ناقص گیند کی بھرپور پٹائی کرتے رہے۔

پیرالمپک میڈل یافتگان کو نقد انعام
نئی دہلی، 9ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) ایس یو وی بنانے والی معروف کمپنی مہندرا اینڈ مہندرا (ایم اینڈ ایم) نے ریو پیرالمپک طلائی تمغہ فاتح دیویندر جھاجھریا اور مریپن تھنگاویلو اور کانسہ کا تمغہ فاتح ورون سنگھ بھاٹی کو کل یہاں ایک تقریب میں 10،10 لاکھ روپئے کے نقد انعام سے نوازا۔ جھاجھریا اور تھنگاویلو کو ایم اے تھا رآفروڈر گاڑی بھی پیش کی گئی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT