Monday , September 25 2017
Home / ہندوستان / کھاتوں میں آمدنی سے غیرمتناسب رقومات کیخلاف انکم ٹیکس کی مہم

کھاتوں میں آمدنی سے غیرمتناسب رقومات کیخلاف انکم ٹیکس کی مہم

۔10 نومبر سے نوٹسوں کی تیاری ، جنوری 2017ء سے اجرائی کا آغاز ، مشتبہ کھاتوں پرکڑی نظر
نئی دہلی ۔ 16 نومبر (سیاست ڈاٹ  کام) محکمہ انکم ٹیکس نے نوٹوں کی منسوخی کے بعد اپنے کھاتوں میں اب جمع کی جانے والی ’’غیرمتناسب‘‘ رقومات پر سال نو 2017ء سے نوٹسوں کی اجرائی کا فیصلہ کیا ہے۔ باخبر ذرائع نے کہا کہ محکمہ انکم ٹیکس 30 ڈسمبر کے بعد نوٹسوں کی اجرائی کا آغاز کرسکتا ہے اور 8 نومبر کی شب نوٹوں کی منسوخی کے اچانک اعلان اور دوسرے دن بینکوں کو بند رکھنے کے بعد 10 نومبر کو دوبارہ کشادگی کے ساتھ ہی کھاتوں میں رقومات جمع کرنے والوں پر کڑی نظر رکھی گئی ہے اور 10 نومبر سے ہی نوٹسوں کی تیاری شروع کردی گئی ہے۔ یہ نوٹسیں ان ہی کے نام جاری کی جائیں گی جنہوں نے اپنی آمدنی سے دوگنی رقم اپنے کھاتوں میں جمع کی ہے یا ان کے کھاتوں کسی دوسرے ذرائع سے یہ رقومات موصول ہوئی ہیں۔ وزارت فینانس کے ایک اعلیٰ ذرائع نے مزید کہا کہ معلنہ آمدنی سے زائد یا دوگنی رقم رکھنے والے کھاتوں پر نظر رکھنے اور ان کا پتہ چلانے کیلئے محکمہ انکم ٹیکس نے ملک بھر میں خصوصی ٹیمیں تشکیل دی ہے۔ جن کا متعلقہ عملہ شب و روز اس کام میں مصروف ہیں۔ نیز زائد اسٹاف سے بھی مدد لی جارہی ہے۔ حکومت کو اندیشہ ہیکہ کئی افراد اپنی غیرمعلنہ رقومات اپنے ملازمین اور رشتہ داروں یا کمیشن یافتہ مقررہ افراد کے جن دھن کھاتوں میں جمع کررہے ہیں حالانکہ جن دھن کھاتے غریبوں کیلئے صفر بیلنس سے کھولے گئے ہیں۔ علاوہ ازیں آمدنی سے زائد رقومات جمع کرنے والے افراد کی آمدنی کے ذرائع کا پتہ چلانے کیلئے ایک اور خصوصی ٹیم بھی تشکیل دی گئی ہے۔ ان کاموںکی تکمیل کیلئے کئی افراد کی خدمات یومیہ 1000 روپئے اجرت پر حاصل کی گئی ہیں۔ محکمہ انکم ٹیکس ایسے کھاتوں میں گذشتہ چھ ماہ کے دوران رقومات جمع کرنے اور نکالنے سے متعلق تمام حسابات کا بھی باریک بینی سے نوٹ لے گا۔

TOPPOPULARRECENT