Sunday , August 20 2017
Home / سیاسیات / کیرالا میں بی جے پی ذات پات کی سیاست پر عمل پیرا

کیرالا میں بی جے پی ذات پات کی سیاست پر عمل پیرا

تروننتھا پورم ۔ 9 ۔ مارچ ( سیاست ڈاٹ کام) کیرالا اسمبلی انتخابات میں ہمہ رخی مقابلے کے دوران اپنے وجود کو منوانے کیلئے بی جے پی نے بھارت دھرماجن سنہا سے مفاہمت کرلی ہے ۔ اس نئی سیاسی جماعت کو شری نارائنا دھرما پری پالانایگم نے قائم کی ہے  جو کہ پسماندہ طبقہ ’ایز پاور‘ کی طاقتور تنظیم ہے۔ بی جے پی اور بی ڈی جے ایس کے ریاستی قائدین نے آج مشترکہ پریس کانفرنس میں یہ اعلان کیا اور بتایا کہ دونوں جماعتوں نے مجوزہ انتخابات کا متحد مقابلہ کرنے سے اتفاق کرلیا ہے ۔ بی جے پی کے ریاستی صدر کے راج شیکھرن اور بی ڈی جے ایس کے ریاستی صدر تشار ویلاپلی نے بتایا کہ ریاست میں این ڈی اے ایک طاقتور شکل میں داخل ہوگئی ہے اور مجوزہ اسمبلی انتخابات میں خاطر خواہ کامیابی حصل کرلے گی ۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ آئندہ 10 یوم میں نشستوں کی تقسیم کوقطعیت دیدی جائے گی۔ فی الحال بی جے پی 140 نشستوں پر مقابلہ کی تجویز پیش کی ہے ۔ یہ ادعا کرتے ہوئے کہ کیرالا کے گورنر کانگریس کی زیر قیادت یو ڈی ایف اور سی پی ایم کی زیر قیادت ایل ڈی ایف سے مایوس ہوگئے ہیں ، جس کے پیش نظر این ڈی اے ایک بہتر ، متبادل مجاز کے طور پر ابھری ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مزید پارٹیوں کے ساتھ انتخابی مفاہمت پر بات چیت جاری ہے ۔

TOPPOPULARRECENT