Monday , October 23 2017
Home / سیاسیات / کیرالا میں نئی کابینہ کو قطعیت

کیرالا میں نئی کابینہ کو قطعیت

تھروننتھا پورم ۔ 23 ۔ مئی (سیاست ڈاٹ کام) کیرالا اسمبلی انتخابات میں شاندار کامیابی کے بعد لیفٹ اینڈ ڈیموکریٹک فرنٹ کی دو بڑی جماعتوں سی پی ایم اور سی پی آئی نے آج وزراء کیفہرست کو قطعیت دیدی ہے جس میں 12 نئے چہرے شامل کئے گئے ہیں۔ ریاستی کابینہ کے 19 وزراء فہرست میں سی پی ایم کے 12 بشمول چیف منسٹر سی پی آئی کے 4 ، جنتا دل (ایس) ، این سی پی ، کانگریس (ایس) کے ایک ایک رکن ہوں گے۔ نئے وزراء میں ای پی جیہ راجن کے کے شلیجہ ، ٹی پی راما کرشنن ، کے سریندرن ، اے بی محی الدین ، پروفیسرس رویندر ناتھ اور ڈاکٹر کے ٹی چلبل ہوں گے جبکہ پی سری رام کرشنن نئے اسپیکر اور پی ششی نئے ڈپٹی اسپیکر ہوں گے۔

 

مدھیہ پردیش کانگریس کا ایک ہفتہ طویل احتجاج
بھوپال ۔ 23 ۔ مئی : ( سیاست ڈاٹ کام) : مدھیہ پردیش میں کانگریس پارٹی کل سے مرکز کی معاشی پالیسیوں کے خلاف ایک ہفتہ طویل احتجاجی مظاہرہ کرے گی ۔ آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے رکن محمد سلیم نے آج میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ لوک سبھا انتخابات کے موقع پر بیرونی ممالک سے بلیک منی واپس لانے کا وعدہ کیا گیا تھا لیکن نریندر مودی کی معاشی پالیسیوں اور بدنظمی کی وجہ سے وائٹ منی ( جائز دولت ) ملک سے باہر چلے جارہی ہے ۔ تباہ کن معاشی پالیسیوں کے خلاف کانگریس پارٹی بھوپال میں پیرگیٹ سے ایک ہفتہ طویل احتجاجی تحریک شروع کرے گی ۔ جس کے دوران وزیر اعظم ، چیف منسٹر مدھیہ پردیش شیوراج سنگھ چوہان اور ان کے بدعنوان وزراء کے پتلے نذر آتش کیے جائیں گے ۔ مسٹر محمد سلیم جو کہ سابق صدر نشین پردیش کانگریس اقلیتی سیل بھی ہیں بتایا کہ سال 2008 میں معاشی سست رفتاری کے باوجود وزیر اعظم منموہن سنگھ کی زیر قیادت یو پی اے حکومت بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا ۔ پردیش یوتھ کانگریس کے ترجمان سید سعود حسن نے بتایا کہ انتخابات کے موقع پر نریندر مودی نے ہر سال ایک کروڑ روزگار فراہم کرنے کا وعدہ کیا تھا لیکن یہ بلند بانگ ثابت ہوئے ۔

TOPPOPULARRECENT