Monday , August 21 2017
Home / دنیا / کینیڈا میں خواتین کو حجاب پہن کر شہریت کا حلف لینے کی اجازت

کینیڈا میں خواتین کو حجاب پہن کر شہریت کا حلف لینے کی اجازت

اوٹاوہ ۔ 17 ستمبر(سیاست ڈاٹ کام) کینیڈا کی ایسی خواتین جو ملک کی شہریت کیلئے عدالتوں میں حلف لینے خواہشمند ہیں انہیں حجاب کے ساتھ حلف لینے کی اجازت ہوگی۔ کینیڈا میں عنقریب انتخابات منعقد شدنی ہیں اور اسی کے پیش نظر حکمراں جماعت نے اپنی پالیسی میں ترمیم کافیصلہ کرتے ہوئے حجاب پر عائد پابندی کو برخاست کردیا۔ دریں اثناء کینیڈا کے وزیراعظم اسٹینفین ہارپر نے بتایا کہ قبل ازیں ماہ فروری میں زونیرہ اسحق پر جو فیصلہ کیا گیا تھا، وہ ناقابل قبول تھا۔ زونیرہ اسحق ٹورنٹو کی ساکن ہے۔ کینیڈا کی ایک عدالت نے وضاحت کرتے ہوئے کہا تھا کہ حجاب پر پابندی عائد کرنے کا مطلب یہ ہیکہ زونیرہ اسحق کی مذہبی آزادی سلب کی جارہی ہے جس کی کینیڈین چارٹر آف رائٹس اینڈ فریڈمس میں طمانیت دی گئی ہے۔ تین ججس پر مشتمل ایک پینل نے زونیرہ اسحق کے حق میں فیصلہ دیتے ہوئے کہاکہ زونیرہ نہ صرف شہریت کا حلف لینے کی اہل ہے بلکہ کینیڈین پارلیمانی انتخابات جو 19 اکٹوبر کو منعقد شدنی ہیں، اپنے حق رائے دہی کا استعمال بھی کرسکتی ہے۔ زونیرہ اسحق کا تعلق پاکستان سے ہے۔ وہ 2008ء میں کینیڈا آئی اور 2013ء میں کامیابی کے ساتھ شہریت کا ٹسٹ مکمل کیا لیکن اس نے حلف برداری تقریب میں شرکت کرنے سے انکار کردیا تھا کیونکہ 2011ء میں کینیڈین قانون کے مطابق حجاب پہننے کی اجازت نہیں تھی جبکہ زونیرہ حجاب پہن کر حلف برداری میں حصہ لینا چاہتی تھی۔

TOPPOPULARRECENT