Thursday , October 19 2017
Home / شہر کی خبریں / کے سی آر نے انتخابی ٹکٹ کیلئے فرزند کا نام تک تبدیل کردیا تھا

کے سی آر نے انتخابی ٹکٹ کیلئے فرزند کا نام تک تبدیل کردیا تھا

بیٹے کو چیف منسٹر بنانے نئے سیکریٹریٹ کی تعمیر کا منصوبہ ۔ تلنگانہ تلگودیشم لیڈر ریونت ریڈی کا ادعا
حیدرآباد۔8اکٹوبر ( سیاست نیوز) کارگزار صدر تلنگانہ تلگودیشم پارٹی مسٹر ریونت ریڈی نے چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ پر الزام عائد کیا کہ انہوں نے 1983 میں تلگودیشم ٹکٹ حاصل کرنے اپنے فرزند کا نام تک تبدیل کردیا تھا ۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے کے سی آر نے 1983 کے انتخابات میں تلگودیشم ٹکٹ لینے این ٹی راما راؤ سے غلط بیانی کی تھی ۔ انہوں نے کے ٹی آر کو این ٹی آر کے سامنے پیش کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس لڑکے کا نام این ٹی آر کے نام پر رکھا گیا ہے ۔ ریونت ریڈی نے کہا کہ در اصل کے ٹی آر کا نام سات سال تک اجئے تھا لیکن بعد میں انہوں نے نام کے ٹی آر رکھا تھا ۔ انہوں نے چندر شیکھر راؤ پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہ کسی زمانے میں پاسپورٹ ایجنٹ اور یوتھ کانگریس میں پیروکار رہے تھے ۔ اس کے باوجود این ٹی راما راؤ نے انہیں موقع دیا تھا ۔ کے سی آر 1983 میں تلگودیشم کی مقبولیت کے باوجود رکن اسمبلی منتخب نہیں ہوسکے تھے تاہم بعد میں این ٹی راما راؤ نے انہیں نہ صرف رکن اسمبلی بنایا بلکہ انہیں ریاستی کابینہ میں بھی شامل کیا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر نے اپنی قیامگاہ کی تعمیر پر ایک ہزار کروڑ روپئے خرچ کرچکے ہیں اور اب اپنے فرزند کیلئے دس ہزار کروڑ کے مصارف نے نیا سیکریٹریٹ تعمیر کرنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں۔ اس کیلئے واستو کا بہانہ پیش کیا جا رہا ہے ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ چیف منسٹر کو خوف ہے کہ موجودہ سیکریٹریٹ کی عمارت کے واستو کی طاقت سے اپنے بھانجے ہریش راؤ کے چیف منسٹر بننے کے اندیشوں پر ہی کے سی آر نئے سیکریٹریٹ کی تعمیر کا منصوبہ رکھتے ہیں۔ ۔ قائد تلنگانہ تلگودیشم مقننہ پارٹی نے کہا کہ آئندہ انتخابات میں تلنگانہ راشٹرا سمیتی کی کامیابی ممکن نہیں ہے ۔انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر ہر روز نئی بات کرتے ہیں جس سے عوام انہیں تغلق سے تعبیر کر رہے ہیں

TOPPOPULARRECENT