Saturday , August 19 2017
Home / شہر کی خبریں / کے سی آر کی کارکردگی کی بنیاد پر تلنگانہ کو سرفہرست مقام

کے سی آر کی کارکردگی کی بنیاد پر تلنگانہ کو سرفہرست مقام

ریاست کے لیے فخر ، ٹی آر ایس ایم ایل سی فاروق حسین کا ادعا
حیدرآباد ۔ 15 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز) : ٹی آر ایس کے رکن قانون ساز کونسل مسٹر محمد فاروق حسین نے کارکردگی کی بنیاد پر چیف منسٹر کے سی آر کو سارے ملک میں نمبر ون موقف حاصل ہونے پر سارے تلنگانہ کو فخر ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے اپوزیشن جماعتوں کو ترقیاتی کاموں میں رکاوٹ نہ بننے کا مشورہ دیا ۔ مسٹر محمد فاروق حسین نے کہا کہ علحدہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل میں اہم رول ادا کرنے والے کے سی آر نے تلنگانہ کی ترقی اور عوام کی فلاح و بہبود کے لیے اپنے آپ کو وقف کردیا ہے ۔ جس کی بنیاد پر انہیں وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے چیف منسٹرس کی کارکردگی پر کرائے گئے سروے میں سرفہرست مقام حاصل ہوا ہے ۔ جو سارے تلنگانہ کے لیے باعث فخر ہے ۔ واٹر گرڈ ، تالابوں کا احیاء ، مشین بھاگیرتا ، مشین کاکتیہ جیسے اسکیمات کی ملک کے دوسرے ریاستوں میں تقلید کی جارہی ہے ۔ آبپاشی پراجکٹس کے ڈیزائن میں تبدیلی کرتے ہوئے تلنگانہ کی پسماندگی اور خشک سالی کو دور کرنے کے لیے بڑے پیمانے پر عملی اقدامات کیے جارہے ہیں ۔ تلنگانہ میں اقلیتوں کے لیے 1200 کروڑ روپئے کا اقلیتی بجٹ مختص کرتے ہوئے اقلیتوں میں خوشحالی لانے اور ترقیاتی کاموں میں اقلیتوں کو حصہ دار بنایا جارہا ہے ۔ سب سے بڑی بات یہ ہے کہ حیدرآباد کی گنگا جمنی تہذیب کا دوبارہ احیاء کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ مسٹر محمد فاروق حسین نے اپوزیشن جماعتوں کو مشورہ دیا کہ وہ تنقید برائے تنقید کی پالیسی سے باز آجائے اور تنقید برائے تعمیر کریں ورنہ تلنگانہ کی عوام انہیں ہرگز معاف نہیں کرے گی ۔ ضمنی انتخابات کے نتائج اپوزیشن جماعتوں کے لیے سبق آموز ہے ۔ عوامی رجحان جاننے کے بعد بھی اپوزیشن جماعتوں نے اپنا محاسبہ نہیں کیا ہے ۔ اور آبپاشی پراجکٹس کی تعمیرات میں سیاسی مفادات کے لیے روکاوٹیں کھڑی کرتے ہوئے ترقیاتی کاموں میں رکاوٹ بن رہے ہیں ۔ من گھڑت کہانیاں بناتے ہوئے عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہے ہیں ۔ 12 فیصد مسلم تحفظات پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے مسٹر محمد فاروق حسین نے کہا کہ چیف منسٹر کے سی آر عہد کے پابند ہے ۔ سدھیر کمیٹی کی رپورٹ وصول ہونے کے بعد ہم خود بی سی کمیشن تشکیل دینے کا حکومت سے مطالبہ کریں گے ۔۔

TOPPOPULARRECENT