Wednesday , September 27 2017
Home / اضلاع کی خبریں / کے سی آر کی قیادت میں تلنگانہ ترقی کی راہ پر گامزن

کے سی آر کی قیادت میں تلنگانہ ترقی کی راہ پر گامزن

نرمل 3 جون (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) نئی ریاست تلنگانہ کی دو سالہ مدت میں تاریخ ساز ترقیاتی کاموں کے ذریعہ بہت کم وقت میں مثالی کام کرتے ہوئے ایک تاریخ بنائی ہے۔ عوام کو چیف منسٹر چندرشیکھرر اؤ سے توقعات وابستہ ہیں۔ یہی سبب ہے کہ عام انتخابات میں کامیابی کے بعد جہاں جہاں بھی ضمنی انتخابات ہوئے عوام نے ٹی آر ایس سے اپنی اٹوٹ وابستگی کا ثبوت دیتے ہوئے شاندار کامیابی عطا کی۔ ان خیالات کا اظہار ریاستی وزیر امکنہ قانون انڈومنٹ اے اندرا کرن ریڈی نے اپنی رہائش گاہ پر نمائندہ سیاست جلیل ازہر کو تلنگانہ کے دو سالہ جشن پر خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کیا۔ وزیر موصوف نے کہاکہ آج علاقہ تلنگانہ میں مختلف اسکیمات کے ذریعہ تمام طبقات کی زندگی میں خوشحالی لانے کے اقدامات کو دیکھتے ہوئے ردوسری ریاستیں بھی تلنگانہ کے چیف منسٹر کی مستحکم قیادت اور ان کی سیاسی بصیرت کی ستائش کررہی ہیں۔ وزیر موصوف نے بتایا کہ ٹی آر ایس ریاست تلنگانہ کو سنہرا تلنگانہ بنانے میں کوئی کسر باقی نہیں رکھے گی۔ انھوں نے ضلع عادل آباد کی ترقی کے لئے بھی خاطر خواہ فنڈس کی فراہمی کے لئے چیف منسٹر سے نمائندگی کرتے ہوئے سارے ضلع میں ترقیاتی کاموں کی انجام دہی کے لئے تمام محکمہ جات کو ہدایات جاری کرچکے ہیں۔ وزیر موصوف نے بتایا کہ موسم گرما کی شدت میں لوگ اکثر برقی کی سربراہی سے پریشان رہا کرتے تھے۔ لیکن ٹی آر ایس حکومت سنبھالنے کے بعد برقی کی سربراہی کو ایک کارنامہ کہا جانے لگا۔ آج اقلیتوں کی تعلیمی حالت کو سدھارنے کے لئے 70 اقامتی اسکولس جس میں اقلیتی طلباء پر فی کس سالانہ اسّی ہزار روپئے کے خرچ سے تعلیم کا جال بچھایا جارہا ہے۔ اس کارنامہ کا سہرا ٹی آر ایس سربراہ چندرشیکھر راؤ کو جاتا ہے جنھوں نے نئی نسل کے شاندار مستقبل کے لئے اس منفرد اسکیم کا آغاز کیا ہے جبکہ مسلم لڑکیاں جو انتہائی غربت کی سطح پر زندگی بسر کررہے ہیں ان کی شادی سے متعلق ان کے بھی گھر آباد کرنے کے لئے شادی مبارک اسکیم شروع کی گئی۔ شاہراہوں کو ترقی دی جارہی ہے۔ طبی سہولتوں کی خاطر سرکاری دواخانوں میں بڑے پیمانے پر انتظامات کئے جارہے ہیں۔ وزیر موصوف نے آخر میں کہاکہ مستقر نرمل میں انڈر گراؤنڈ ڈرینج سسٹم کے لئے 120 کروڑ روپئے کی منظوری کے لئے نمائندگی کی گئی۔ چیف منسٹر نے پہلے مرحلہ کے لئے 60 کروڑ روپئے منظور کئے۔ انھوں نے دعویٰ کیاکہ ملک میں کوئی بھی ریاست اتنے کم وقت میں ایسی ترقی نہیں کی جس طرح کے سی آر کی قیادت میں ریاست تلنگانہ ترقی کی سمت گامزن ہے جہاں سماج کا ہر طبقہ یکساں مطمئن ہے۔

TOPPOPULARRECENT