Thursday , October 19 2017
Home / شہر کی خبریں / ’کے ٹی آر اپنے وعدوں کی پابندی نہیں کرسکتے‘

’کے ٹی آر اپنے وعدوں کی پابندی نہیں کرسکتے‘

شکست پر مستعفی ہونے وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کا چیلنج ناقابل اعتبار: تلگودیشم
حیدرآباد۔11جنوری ( سیاست نیوز)  وزیر پنچایت راج وانفارمیشن ٹکنالوجی مسٹر کے ٹی راما راؤ کے اس اظہار خیال پر کہ اگر گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن انتخابات میں ٹی آر ایس کامیابی حاصل نہ کرنے کی صورت میں وہ ( کے ٹی آر ) اپنے وزارتی عہدے سے مستعفی ہوجائیں گے ۔ وزیر موصوف کے اس اظہار خیال پر اپنے شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے صدر گریٹر حیدرآباد تلگودیشم پارٹی و رکن اسمبلی مسٹر ایم گوپی ناتھ نے کہا کہ مسٹر کے ٹی آر اپنے بیان پر ہرگز قائم و پابند نہیں رہتے ہیں اور وہ اگر اپنے بیان پرقائم رہتے ہیں تو ہم ان کے ہر سوال کو قبول کرنے کیلئے ہمیشہ تیار ہیں ۔ مسٹر گوپی ناتھ نے کہا کہ گریٹر حیدرآباد میں ٹی آر ایس پرچم لہرانے وزیر پنچایت راج مسٹر کے ٹی آر کی بات نئے سال کا سب سے بڑا ’’ جوک‘‘  ہوگا ۔ انہوں نے وزیر پنچایت راج مسٹر کے ٹی راما راؤ کے بیانات کا مضحکہ اڑایا اور کہا کہ ٹی آر ایس صرف زبانی اعلانات کرنے والی پارٹی کا نام ہے بلکہ عملی اقدامات کرنے والی پارٹی کا نام نہیں ہے ۔ اس سلسلہ میں ٹی آر ایس بالخصوص مسٹر کے ٹی راما راؤ کو یاد دلایا کہ صدر تلنگانہ راشٹرا سمیتی و چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے سکریٹریٹ کو تبدیل کرنے کا اعلان کیا تھا ‘ حسین ساگر ( ٹینک بنڈ) کے پانی کو صاف ستھرا و شفاف بنانے کا بھی اعلان کیا گیا تھا ۔ علاوہ ازیں دلت طبقہ کو چیف منسٹر عہدے پر فائز کرنے کا اعلان کیا تھا ‘ ہر گھر میں ایک ملازمت فراہم کرنے ‘ غریب دلت طبقات کو کم از کم تین ایکڑ اراضی فراہم کرنے کے وعدے کئے تھے ۔ ان تمام اعلانات و وعدوں میں کوئی ایک بھی پورا نہیں کیا گیا بلکہ ڈپٹی چیف منسٹر عہدے پر ڈاکٹر راجیا کو فائز کیا گیا تھا لیکن صرف چند ماہ میں انہیں ( ڈاکٹر راجیا) ڈپٹی چیف منسٹر عیدے سے اچانک علحدہ کر کے دلت طبقات کی توہین کی تھی ۔ صدر گریٹر حیدرآباد تلگودیشم پارٹی مسٹر گوپی ناتھ نے وزیر موصوف اور چیف منسٹر کے اس طرز عمل پر اپنی شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ مسٹر کے سی آر اور مسٹر کے ٹی آر دونوں ہی اپنے سیاسی مفادات کے حصول کیلئے کچھ بھی کرسکتیہ یں اور جب اپنے سیاسی مفادات حاصل ہوجاتے ہیں تو وہ اپنے تمام وعدوں و اعلانات کو فراموش کردینے کے عادی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ نہ صرفشہر حیدرآباد بلکہ ریاست تلنگانہ کے عوام دونوں کے دوہرے معیار سے بخوبی واقف ہیں اور ہرگز ان کے گمراہ کن باتوں میں شہر کے عوام آنے والے نہیں ہیں ۔ انہوں نے شہر حیدرآباد کے عوام سے کئے ہوئے وعدوں کو پورا کرنے اور شہر کی ترقی دینے پر اولین توجہ مرکوز کرنے کی پابند تلگودیشم پارٹی کو کامیاب بنانے کی پرزور اپیل کی ۔

TOPPOPULARRECENT