Friday , October 20 2017
Home / ہندوستان / گائو ذبیحہ پر امتناع عائد کردیں، مسلم تنظیم کی اپیل

گائو ذبیحہ پر امتناع عائد کردیں، مسلم تنظیم کی اپیل

علی گڑھ۔3 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) مسلم دانشوروں کی تنظیم نے آج کہا کہ وہ گائو ذبیحہ پر امتناع عائد کرنے اور گائے کو قومی جانور قراردینے کے لیے مرکز کی کسی بھی تجویز کی بھرپور تائید کرے گی۔ ڈائرکٹر فورم فار مسلم اسٹیڈیز اینڈ انالسیس جسیم محمد نے یہاں کہا کہ ہماری تنظیم نے قرارداد منظور کرتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی کے حالیہ بیان کا خیرمقدم کیا ہے جس میں ملک کے مختلف حصوں میں گائو رکھشا کے نام پر بے قصور لوگوں کے ناحق قتل کی مذمت کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم ایسی کوئی بھی تجویز کی بھرپور تائید کریں گے جو مرکز کی طرف سے گائو ذبیحہ پر امتناع اور گائے کو ہندوستان کا قومی جانور قرار دینے کے تعلق سے پیش کی جائے۔ جسیم نے کہا کہ بے قصور لوگوں کو شدید زدوکوب کرتے ہوئے ہلاک کردینے کے واقعات کا بار بار پیش آنا حق زندگی اور آبادی کے بڑے حصے کے لیے گزر بسر کا انتظام کرنے کے بنیادی حق کے لیے سنگین خطرہ پیدا کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کا ہر مسلمان گائے کے تحفظ کو یقینی بنانے میں سنجیدہ ہے کیوں کہ اکثریت برادری کے مذہبی جذبات اس سے وابستہ ہیں۔ تاہم بھینس کی تجارت سے وابستہ مسلمانوں کا ناحق قتل ملک میں داخلی سلامتی کے لیے سنگین خطرہ ہے۔ اسی طرح بعض دیگر بہانوں سے بھی مارپیٹ کی جارہی ہے۔ وزیراعظم کو ایسے واقعات روکنے کے لیے سخت اقدامات کرنے چاہئیں۔

TOPPOPULARRECENT