Wednesday , June 28 2017
Home / Top Stories / گائے کی حفاظت کے نام پر گاؤ رکشکوں نے دو ہندوؤں کو شدید زدکوب کیا۔

گائے کی حفاظت کے نام پر گاؤ رکشکوں نے دو ہندوؤں کو شدید زدکوب کیا۔

گریٹر نوائیڈا:مسلمان سمجھ کر گاؤ رکشکوں نے غلطی سے دو ہندؤں کو بری طرح پیٹا۔یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب منجی پور سرسا کے ساکن دوبے قصور لوگ جابر سنگھ عمر 35اور بھوپ سنگھ عمر 45نے مہندی پور گاؤں سے ایک گائے خرید کر واپس لوٹ رہے تھے۔
آرام سے گھر واپسی کے دوران دونوں ایک ایک درخت کے سایہ میں کچھ دیر آرام کے لئے رکے‘ پھر کہیں سے گاؤ رکشک وہاں پر پہنچے اور بناء کچھ پوچھے انہیں زدکوب کرنا شروع کردیا‘ جس کی وجہہ سے وہ لوگ زخمی ہوگئے۔مارپیٹ کے دوران گاؤ رکشکوں نے کچھ پوچھا تک نہیں۔

جب دونوں نے کہاکہ ہم مسلمان نہیں ہے اور گائے صرف دودھ کے لئے لے جارہے ہیں تو مذکورہ گاؤ رکشک وہاں دونوں کو شدید زخمی حالت میں چھوڑ کر سے راہ فرار اختیار رکرلی۔

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ جمعرات کے روز پیش ائے اس واقعہ جس میں دولوگ ایک گائے اور بچھڑا لے جارہے تھے اسی دوران وہ ایک درخت کے سایہ میں کچھ دیر کے لئے رکے ‘اسی دوران کچھ بی جے پی کارکن اور گاؤ رکشک وہا ں پر پہنچے اوردونوں کو مسلمان سمجھ کر پیٹا ‘ اس کے علاوہ ان لوگوں نے مارپیٹ کے لئے مزید لوگوں کو بھی موقع پر طلب کیاتھا۔

ایک مقامی شخص نے اس بات کا انکشاف کیا۔زخمیوں کو دواخانہ منتقل کیاگیا جنھیں جسم کے اندرونی حصوں میں چوٹیں لگی ہیں۔مہیش ‘ اشیش‘اوم پال اور دیگر پانچ کے خلاف ائی پی سی کے دفعات 147,323,504,اور506 کے تحت ایک ایف آئی آر بھی درج کیاگیا ہے ۔

ایس ایچ او جیوار پولیس اسٹیشن اجئے کمار شرما نے بتایا کہ ہم حملہ آواروں کی شناخت کرلی گئی ہے اور ان کی تلاش جاری ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT