Thursday , August 17 2017
Home / ہندوستان / گائے کی چمڑی نکالنے پر دو دلتوں کو برہنہ کرکے پٹائی کردی گئی ۔ اے پی کے وجئے واڑہ میں واقعہ

گائے کی چمڑی نکالنے پر دو دلتوں کو برہنہ کرکے پٹائی کردی گئی ۔ اے پی کے وجئے واڑہ میں واقعہ

وجئے واڑہ ، 10 اگست (یو این آئی ) گجرات کے اوناؤ میں دلتوں کے ساتھ پٹائی کے واقعہ کی طرح واقعہ آندھراپردیش میں بھی پیش آیا ۔ وجئے واڑہ میں گائے کی چمڑی نکالنے جانے کے دوران دو دلت بھائیوں کو ناریل کے درخت سے باندھ کر انہیں برہنہ کرتے ہوئے ان کی پٹائی کی گئی ۔ بتایا جاتا ہے کہ یہ پٹائی گاورکھشکوں نے کی۔ یہ معاملہ تاخیر سے سامنے آیا ہے ۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے اتوار کو تلنگانہ کے ضلع میدک کے گجویل میں کہا تھا کہ گولی مارنا ہے تو مجھے ماردو لیکن میرے دلت بھائیوں کو نہیں ۔ ان کے اس بیان کے دوسرے ہی دن یہ واقعہ پیش آیا ۔ ان نوجوانوں کو بجلی کے جھٹکے سے مری گائے کا چمڑا نکالنے کیلئے لے جایا گیا تھا ۔ اس حملہ میں زخمی نوجوان دو بھائی اسپتال میں زیر علاج ہیں ایک کی حالت تشویشناک ہے ۔ دلتوں نے کہا کہ ناریل کے جھاڑ سے باندھ کر انہیں برہنہ کیا گیا اور ان کی پٹائی کی گئی ۔ ان زخمی دلتوں کی شناخت الیسا اور لازر کے طور پر کی گئی ہے ۔ یہ گائے ایک سبزی فروش کی تھی جس نے بجلی کے جھٹکے سے اس کے مرنے کے بعد ان نوجوانوں کی خدمات اس کی چمڑی نکالنے کیلئے حاصل کی تھی ۔ تاہم بتایا جاتا ہے کہ جب رات میں یہ نوجوان چمڑی نکال رہے تھے تو اسی دوران چوری کرکے اسے ذبح کرنے ے شبے میں ان پر یہ حملہ کیا گیا ۔ اس واقعہ کے خلاف دلتوں نے احتجاج کیا ۔

 

دلتوں پر حملہ کی مذمت ، وائی ایس آر کانگریس
وجئے واڑہ ۔ 10 ۔ اگست : ( آئی این این ) : وائی ایس آر کانگریس نے گاؤ رکھشنا سمیتی کارکنوں کی جانب سے دلتوں پر بہیمانہ حملوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے حکومت کی عدم کارروائی کو تنقید کا نشانہ بنایا ۔ پارٹی ایم ایل اے یو کلپنا نے یہاں اخباری نمائندوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ٹی ڈی پی اور بی جے پی ورکرس نے گاؤ رکھشنا سمیتی کے نام پر دلتوں کو مردہ گائیوں کی کھال اتارے جانے کے دوران ظالمانہ زد و کوب کا نشانہ بنایا اورریاستی حکومت اس سلسلہ میں خاطیوں کے خلاف کسی کارروائی سے قاصر رہی ۔ انہوں نے کہا دلت افراد مردہ جانوروں کی کھال اتار رہے تھے جو کہ ان کا قدیم پیشہ ہے ۔ انہوں نے ایس سی / ایس ٹی طبقہ پر حملوں میں اضافہ پر تشویش کا اظہار کیا ۔ انہوں نے کہا ریاست میں ٹی ڈی پی بی جے پی اقتدار کے بعد سے دلت اور اقلیتوں پر حملوں میں اضافہ ہوچکا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT