Sunday , July 23 2017
Home / ہندوستان / گائے کے تحفظ کا پیغام دینے مسلم شخص کی بھوک ہڑتال

گائے کے تحفظ کا پیغام دینے مسلم شخص کی بھوک ہڑتال

احمدآباد ۔10جولائی ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) اقلیتی طبقہ کے افراد پر مسلسل حملوں کے پس منظر میں جو مبینہ طورپر گاؤ دہشت گردوں نے کئے ہیں ، گجرات کے ایک مسلم شخص نے اعلان کیا ہے کہ وہ 20جولائی سے 48 گھنٹے کی بھوک ہڑتال کرے گا تاکہ گائے کے تحفظ اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کا پیغام پھیلاسکے ۔ 27 سالہ جبار جاٹ ایک گڈریا متوطن لڈبے دیہات تعلقہ ماکھٹ رانا ضلع کچھ ہے اُس نے بھوج میں جو احمدآباد سے 300 کلومیٹر کے فاصلے پر ہے کلکٹر کے دفتر کے روبرو بھوک ہڑتال کا آغاز کیا ۔ حال ہی میں اُس نے کلکٹر کو ایک مکتوب روانہ کرتے ہوئے مطالبہ کیا تھا کہ حکومت کو چاہئے کہ گائیوں کے لئے چرنے کی اراضی ہر تعلقہ میں مختص کی جائے تاکہ گائیں پلاسٹک اور کچرا نہ کھائیں۔ جاٹ نے جو خود بھی 16 گائیوں کا مالک ہے مطالبہ کیا کہ حکومت کو بیلوں کی خریداری پر سبسیڈی دینی چاہئے ۔ اُس نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ تمام گاؤ شالاؤں کو 50 فیصد سبسیڈی دی جائے ، حالانکہ مسلمان گائیوں کا ہندوؤں کے برابر ہی احترام کرتے ہیں لیکن گائیوں کو آوارہ پھرتے اور کچرا کھاتے دیکھ کر مسلمانوں کو تکلیف ہوتی ہے ۔ کئی مسلمان صدیوں سے اپنے روزگار کیلئے گائیں پالتے ہیں۔ گائے کے تحفظ کے بھانے مسلمانوں کو بدنام کیا جارہا ہے، چنانچہ وہ فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور گائے کے تحفظ کا پیغام دینا چاہتے ہیں۔ اسی لئے 20 جولائی سے دو دن کی بھوک ہڑتال کرنے کا اعلان کرچکے ہیں ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT