Sunday , August 20 2017
Home / ہندوستان / گائے کے گوبر سے مہلک امراض کا علاج ممکن

گائے کے گوبر سے مہلک امراض کا علاج ممکن

آر ایس ایس لیڈر شنکر لال کا دعوی
ممبئی ۔8 اگست (سیاست ڈاٹ کام) مقامی آر ایس ایس لیڈر اور صدر اکھل بھارتیہ گائو سیوا سنگھ مسٹر شنکر لال نے سائنس اور منطق پر عجیب و غریب تاثرات پیش کئے ہیں۔ 76 سالہ لیڈر نے گائے کے پیشاب کے فوائد کے ساتھ گوبر کے خواص بیان کئے ہیں جس کے ذریعہ تابکاری سے لے کر مہلک امراض کا علاج کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گائے ہماری ماں ہے، گائے کے گوبر اور پیشاب میں انسانوں کو کسی بھی مرض سے بچانے کے خواص پائے جاتے ہیں۔ اگر گائے کے گوبر سے سرطاں کا علاج کیا جاسکتا ہے تو موبائیل فون کے مائیکرو ویوس (شعائیں) سے کیوں بچایا نہیں جاسکتا۔ آر ایس ایس پرچارک نے ایک انٹرویو میں بتایا کہ سیل فون کی تابکاری سے اپنے آپ کو بچانے کے لئے تازہ گوبر لگایا ہے۔ میرا ایقان ہے کہ یہ کارگر ثابت ہوگا۔ جب ان سے دریافت کیا گیا کہ موبائیل فون کو گوبر کیوں لگایا گیا ہے تو انہوں نے یہ جواب دیا اور کہا کہ اگر گائے کا گوبر کینسر کا علاج کرسکتا ہے فون سے خارج ہونے والی تابکاری شعاعوں کا اثر بھی زائل کرسکتا ہے۔ کیا تم نے سنا نہیں ہے کہ گجرات میں ایک سائنسدان گائے کے پیشاب میں ’سونا‘ (گولڈ) دریافت کیا ہے! انہوں نے یہ انکشافات کئے کہ آسان زچگی کے لئے ہم لوگ حاملہ خواتین کو گائے کا گوبر اور پیشاب استعمال کرواتے ہیں اور ہم تمام اقسام کی مہلک بیماروں کا علاج گوبر سے کرتے ہیں۔ آر ایس ایس لیڈر کا دعوی ہے کہ ہندوستانی دیسی گائیوں میں بعض کرشماتی اشرات پائے جاتے ہیں جو کہ مغربی گائیوں جیرسی اور ہوسٹن میں نہیں ہوتے۔ ان کا گوبر اور پیشاب زہر کے سوا کچھ بھی نہیں ہے۔

TOPPOPULARRECENT