Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / گاندھی اور امبیڈکر کے ورثے پر بی جے پی کا دعویٰ مضحکہ خیز

گاندھی اور امبیڈکر کے ورثے پر بی جے پی کا دعویٰ مضحکہ خیز

’’اسداویسی اور مجلس صرف وہیں الیکشن لڑیں گے جہاں پیسے ملیں گے‘‘: ڈگ وجئے سنگھ
حیدرآباد 12 اپریل (پی ٹی آئی) کانگریس کے سینئر لیڈر ڈگ وجئے سنگھ نے ادعا کیاکہ بی جے پی کے پاس ایسے ممتاز قائدین نہیں ہیں جنھیں وہ اپنے عظیم رہنماؤں کے طور پر پیش کرسکے چنانچہ اب حکمراں جماعت (بی جے پی) خود کو مہاتما گاندھی، بی آر امبیڈکر اور سردار پٹیل جیسے عظیم قومی رہنماؤں کی وراثت سے مربوط کرنے کی کوشش کررہی ہے۔ ڈگ وجئے سنگھ نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ ’’بدبختانہ امر یہ ہے کہ بی جے پی کے پاس ایسی کوئی قدآور شخصیات ہی نہیں ہیں جنھیں وہ اپنے قائدین کے طور پر پیش کرسکتی ہے۔ وہ (بی جے پی) گرو گولواکر جی، ڈاکٹر ہیگڈ یوارجی (آر ایس ایس قائدین) یا پھر ساورکر جی (ہندوتوا نظریہ ساز) کو اپنے قائدین کے طور پر پیش نہیں کرتی۔ آخر کس لئے وہ (بی جے پی) مہاتما گاندھی، سردار پٹیل اور امبیڈکر کے ورثے کی دعویدار بننے کی کوشش کررہی ہے۔ حالانکہ وہ (بی جے پی) ہمیشہ ہی ان تینوں کے خلاف بولتی رہی تھی‘‘۔ آر ایس ایس پر سخت تنقید کرتے ہوئے ڈگ وجئے سنگھ نے الزام عائد کیاکہ سنگھ پریوار کا نظریہ درحقیقت امبیڈکر کی تعلیمات کے خلاف ہے۔ اے آئی سی سی کے جنرل سکریٹری نے مزید کہاکہ ’’یہ وہی لوگ ہیں جنھوں نے دستور ہند کو اس کی منظوری پر نذر آتش کیا تھا۔ یہ (آر ایس ایس) وہی لوگ ہیں جنھوں نے قومی ترنگا لہرانے سے انکار کیا تھا۔ یہ (آر ایس ایس ۔ بی جے پی) بنیادی طور پر بابا صاحب (امبیڈکر) کی تعلیمات کے مخالف ہیں‘‘۔ ٹاملناڈو اسمبلی انتخابات میں حصہ لینے مجلس کے فیصلہ سے متعلق ایک سوال پر ڈگ وجئے سنگھ نے جواب دیا کہ ’’اسدالدین اویسی (صدر مجلس) اور اے آئی ایم آئی ایم وہیں انتخابات لڑیں گے جہاں اُنھیں پیسے ملیں گے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT