Saturday , August 19 2017
Home / دنیا / گاندھی جی کے نایاب پورٹریٹ اور خطوط کی نیلامی

گاندھی جی کے نایاب پورٹریٹ اور خطوط کی نیلامی

لندن ۔ 11 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) لندن کے مشہور سوتھبیز (نیلام گھر) کے مطابق بابائے قوم مہاتما گاندھی کا پنسل سے بنایا ہوا ایک خاکہ جو 1931ء میں تیار کیا گیا تھا، کو 32,500 پاؤنڈس میں نیلام کیا گیا جو اس کی حقیقی قیمت سے چار گنا زیادہ بتایا گیا ہے۔ اس پورٹریٹ کے علاوہ گاندھی جی کے ہاتھ سے تحریر کردہ کچھ خطوط جو انہوں نے مجاہد آزادی اور سبھاش چندر بوس کے بڑے بھائی سرت چندر بوس کو تحریر کئے تھے، کو 37,500 پاؤنڈس میں نیلام کیا گیا۔ سوتھبیز کے مطابق گاندھی جی تصویرکشی کیلئے بھی بہت ہی مشکل سے راضی ہوتے تھے لہٰذا اس بات کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا کہ انہوں نے اپنا خاکہ بنانے کیلئے کسی مصور کے سامنے گھنٹوں بیٹھ کر اپنا وقت خراب کیا ہوگا اور شاید یہی وجہ ہیکہ اس خاکہ کو اہمیت کا حامل سمجھا جارہا ہے کیونکہ نامعلوم مصور نے بہرحال اس زمانے میں کام کے دوران گاندھی جی کا خاکہ تیار کر ہی لیا تھا۔ خاکہ میں گاندھی جی کو زمین پر بیٹھ کر اپنے کام میں انتہائی منہمک بتایا گیا ہے جہاں وہ اپنے قلم سے کاغذات پر کچھ تحریر کررہے ہیں اور ساتھ ہی ساتھ خاکہ پر انہوں نے ایک جملہ بھی تحریر کیا ہے ’’سچائی خدا ہے‘‘۔ ایم کے گاندھی ۔ 4.12.1931۔ یہی وجہ ہیکہ اس پورٹریٹ کو شاذونادر قرار دیتے ہوئے اس کا نیلام عمل میں آیا۔

TOPPOPULARRECENT