Saturday , June 24 2017
Home / ہندوستان / گجرات اسمبلی میں ترمیمی بل گائے ذبیحہ پر 10 سال قید اور ایک لاکھ روپئے جرمانہ

گجرات اسمبلی میں ترمیمی بل گائے ذبیحہ پر 10 سال قید اور ایک لاکھ روپئے جرمانہ

گاندھی نگر ۔ 15 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) حکومت گجرات گاؤذبیحہ میں ملوث رہنے والوں کو انتہائی سخت سزاء کیلئے ایک بل اسمبلی میں متعارف کرنے جارہی ہے۔ گجرات تحفظ جانوران قانون 1954ء میں ترمیم کے ذریعہ ایسے کسی شخص کو جو گائے، بچھڑا، بیل ذبح کرے، اسے 10 سال جیل کی سزاء کا سامنا کرنا پڑے گا۔ موجودہ قانون میں 2011ء میں ترمیم کی گئی تھی اور زیادہ سے زیادہ سزائے قید کو 7 سال اور کم سے کم 3 سال رکھا گیا تھا۔ نئے بل میں جرمانے کی موجودہ رقم 50 ہزار کو دگنا کردیا گیا ہے۔ چیف منسٹر گجرات وجئے روپانی نے یہ اشارہ دیا ہیکہ ان کی حکومت گائے کے تحفظ کیلئے سخت قوانین پر مبنی بل متعارف کرنے پر غور کررہی ہے۔ 2011ء میں نریندر مودی نے جب وہ ریاست کے چیف منسٹر تھے گجرات میں گاؤ ذبیحہ، گائے اور بیف کی منتقلی اور فروخت پر مکمل امتناع عائد کیا تھا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT