Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / گجرات سے بی جے پی کے زوال کا آغاز ہوگا ‘ کانگریس

گجرات سے بی جے پی کے زوال کا آغاز ہوگا ‘ کانگریس

تلنگانہ قائدین کے وفد کی احمد پٹیل سے ملاقات ‘ راجیہ سبھا انتخاب میں کامیابی پر مبارکباد
حیدرآباد ۔21اگست ( سیاست نیوز) قائدین اپوزیشن محمد علی شبیر اور کے جانا ریڈی نے دہلی میں سونیا گاندھی کے سیاسی مشیر احمد پٹیل سے ملاقات کرکے سالگرہ اور راجیہ سبھا کی کامیابی پر مبارکباد دی اور کہا کہ احمد پٹیل کی کامیابی سیکولرازم کی کامیابی ہے ‘ گجرات سے بی جے پی کا زوال ہوگا ۔ تلنگانہ کانگریس قائدین کے وفد نے جس میں قائدین اپوزیشن جانا ریڈی ( اسمبلی) ‘ محمد علی شبیر ( کونسل ) ‘ ڈپٹی لیڈر کونسل پی سدھاکر ریڈی و دوسرے شامل تھے آج دہلی میں احمد پٹیل سے ملاقات کی انہیں سالگرہ کے ساتھ راجیہ سبھا کیلئے کامیاب ہونے پر مبارکباد دی ۔ احمد پٹیل نے ان کی کامیابی کو کانگریس اور سیکولرازم کی کامیابی قرار دیتے ہوئے تلنگانہ اپوزیشن قائدین کو گجرات انتخابات کی مہم میں حصہ لینے کا مشورہ دیا جس سے ان قائدین نے اتفاق کیا ۔ اس موقع پر محمد علی شبیر نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ نریندر مودی اور امیت شاہ کے گھر ( گجرات) سے بی جے پی کی الٹی گنتی شروع ہوگئی ۔ وزیراعظم اور بی جے پی کے قومی صدر کے تمام سیاسی ہتکھنڈوں کو احمد پٹیل اور کانگریس نے ناکام بناکر یہ ثبوت دے دیا ہیکہ مودی ۔ شاہ کا جادو ختم ہوچکا ہے ۔ این ڈی اے اور گجرات بی جے پی حکومت نے احمد پٹیل کو شکست دینے مرکزی و ریاستی اقتدار کا بیجا استعمال کیا ۔ الیکشن کمیشن پر دباؤ بناتے رہے لیکن کانگریس نے دلائل پیش کرکے بی جے پی کی حکمت عملی کا موثر جواب دیا جس کے نتیجہ میں کانگریس اور سیکولرازم کی جیت ہوئی ہے ۔ گجرات انتخآبات میں کانگریس اقتدار حاصل کریگی ۔ محمد علی شبیر نے ملک میں اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں پر حملوں کی مذمت کی اور کہا کہ نریندر مودی کے وزیراعظم بننے کے بعد ہندو توا طاقتوں کو کھلی چھوٹ دی گئی ہے ۔ گاؤ رکھشک قانون ہاتھ میں لے کر مسلمانوں پر حملے کررہے ہیں ۔ لو جہاد کے نام پر ہراسانی جاری ہے ۔ بعدازاں محمد علی شبیر نے جنتر منتر پر اندرا پارک دھرنا چوک بچاؤ کمیٹی کے پروگرام سے خطاب کیا اور کہا کہ تلنگانہ چیف منسٹر کے سی آر کی جاگیر نہیں ہے ۔ احتجاج اور تحریکوں کے ذریعہ علحدہ تلنگانہ کی تحریک چلانے والے کے سی آر اقتدار حاصل کرکے دھرنا چوک کو اپنے لئے خطرے کی گھنٹی سمجھ رہے ہیں اور حکومت کے خلاف ہونے والے جمہوری احتجاج کو کچلنے ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کررہے ہیں ۔ 2019ء کے عام انتخابات میں تلنگانہ کے عوام کانگریس پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے ٹی آر ایس کو سبق سکھائیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT