Friday , September 22 2017
Home / Top Stories / گجرات میں دلتوں کا بند ،پرتشدد احتجاجی مظاہرے

گجرات میں دلتوں کا بند ،پرتشدد احتجاجی مظاہرے

شاہراہوں کی ناکہ بندی، سنگباری اور سرکاری املاک کو نقصان ،7 نوجوانوں کا اقدام خودکشی
احمدآباد ؍ راجکوٹ ۔ 20 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) گجرات کے اونا ٹاؤن میں دلتوں پر حملے کے خلاف جاری احتجاج نے آج ریاست میں انتہائی بدترین صورتحال اختیار کرلی جہاں مزید 7 دلت نوجوانوں نے اقدام خودکشی کی جبکہ تشدد اور لوٹ مار کے واقعات ریاست کے کئی مقامات پر پھیل گئے۔ اونا میں 11 جولائی کو مبینہ طور پر گائے کی کھال اتارنے پر ایک گروپ نے دلتوں کو حملہ کا نشانہ بنایا تھا۔ دلتوں نے اس جانور کو ہلاک کرنے کی تردید کی اور کہا کہ وہ صرف مردہ گائے کی کھال نکال رہے تھے۔ اس واقعہ کے خلاف تشدد پھوٹ پڑا اور اب تک اقدام خودکشی کرنے والے دلت نوجوانوں کی تعداد 17 تک پہنچ گئی۔ ضلع راجکوٹ کے دھراجی ٹاؤن میں تین دلت نوجوانوں نے زہریلا مشروب پی لیا جس کے فوری بعد انہیں قریبی ہاسپٹل منتقل کیا گیا۔ گوندال ٹاؤن میں اور ضلع پوربندر میں ایک دلت نوجوان نے اقدام خودکشی کی۔ اونا ٹاؤن میں ہندوتوا کارکنوں کے ہاتھوں دلت طبقہ کے نوجوانوں کو بہیمانہ انداز میں گھسیٹتے ہوئے زدوکوب کئے جانے کے واقعہ کے خلاف ریاست بھر میں دلت تنظیموں نے بند منایا جس میں زبردست احتجاج کیا گیا اور کئی مقامات پر پُرتشدد واقعات پیش آئے۔ اعلیٰ طبقات سے تعلق رکھنے والے ہندوتوا  کارکنوں کی زیادتی پر برہم دلت طبقہ کے ارکان نے گجرات کے کئی ٹاؤنس اور شہروں میں جلوسوں کا اہتمام کیا۔

کئی مقامات پر سڑکوں کی ناکہ بندی کردی گئی۔ بسوں کو نقصان پہنچایا گیا اور ضلع سریندر گھر میں وادھوان کے قریب حتیٰ کہ ایک ٹرین کو بھی روک دیا گیا۔ گجرات میں آج ریاست گیر احتجاج منظم کیا گیا تھا۔ چیف منسٹر آنندی بین پٹیل نے راجکوٹ ہاسپٹل پہنچ کر زخمی نوجوانوں کی عیادت کی اور اونا میں ان کے افراد خاندان سے ملاقات کرتے ہوئے خاطیوں کے خلاف سخت کارروائی کا تیقن دیا۔ کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی جمعرات کو اور دہلی کے چیف منسٹر اروند کجریوال جمعہ کو اونا کا دورہ کریں گے۔  شمالی گجرات اور سوراشٹرا کے چند حصوں میں بند مکمل رہا، جہاں سنگباری، سڑکوں کی ناکہ بندی کے علاوہ بسوں اور سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے کے واقعات پیش آئے ہیں۔ شمالی گجرات کے پٹن ٹاؤن اور ضلع اراویلی کے علاوہ چوناگڑھ، بھاؤنگر، امریلی اور سواراشٹرا کے چند دوسرے چھوٹے قصبوں میں بھی بند منایا گیا۔ پوربند میں ایک خانگی بس کو نذرآتش کردیا گیا۔ سواراشٹرا کے علاقہ میں عوامی ٹرانسپورٹ کی کئی بسوں کو نقصان پہنچایا گیا۔

TOPPOPULARRECENT