Friday , September 22 2017
Home / ہندوستان / گجرات میں ریٹائرڈ پولیس عہدیداروں کی باز ماموری

گجرات میں ریٹائرڈ پولیس عہدیداروں کی باز ماموری

این کے امین اور ٹی اے باروت کا مستعفی ہونے کا فیصلہ
نئی دہلی۔17 اگست (سیاست ڈاٹ کام) گجرات پولیس کے دو سینئر عہدیداروں این کے امین اور ٹی اے باروت نے جو مبینہ طور پر فرضی انکائونٹر میں ہلاکتوں کے ملزم ہیں، آج سپریم کورٹ میں کہا کہ وہ آج اپنے عہدوں سے سبکدوش ہوجائیں گے۔ این کے امین گزشتہ سال اگست میں سپرنٹنڈنٹ پولیس کے عہدہ سے سبکدوش ہوئے تھے۔ معاہدہ کی بنیاد پر ایک سالہ میعاد کے لیے گجرات کے ضلع ماہی ساگر کے سپرنٹنڈنٹ پولیس مقرر کئے گئے تھے۔ وہ سہراب الدین شیخ اور عشرت جہاں کی ایک فرضی انکائونٹر میں ہلاکت کے مقدمہ میں ماخوذ ہیں۔ باردت کو گزشتہ سال اکٹتوبر میں ڈی ایس پی ویسٹرن ریلویز وڈودرہ ایک سال کے لیے وظیفہ پر سبکودشی کے بعد مقرر کیا گیا ہے۔ وہ عشرت جہاں اور صادق جمال انکائونٹر مقدمات کے ملزم ہیں۔ چیف جسٹس جے ایس کھیہر اور جسٹس ڈی وائی چندرا چوڑ پر مشتمل بنچ نے دونوں عہدیداروں کے دوبارہ تقرر کے خلاف سابق آئی پی ایس عہدیدار راہول شرما کی درخواست کی سماعت اور یکسوئی کی۔ سابق آئی پی ایس عہدیدار نے قانون داں وریندر کمار شرما ایڈوکیٹ کے ذریعہ پیش کردہ درخواست میں پولیس کے اعلی عہدیدار کے پی پی پانڈے کے ڈی جی اور آئی جی پی کے عہدوں سے برخواستگی کے سپریم کورٹ کے حکم کا حوالہ بھی دیا تھا۔ انہوں نے دونوں عہدیداروں کے تقرر کے خلاف ہائی کورٹ میں اپنی درخواست مسترد کئے جانے کے بعد سپریم کورٹ میں اپیل کی تھی۔ باروت بھی دو مقدمات کے ملزم ہیں اور ان کے خلاف فرد جرم بھی پیش کی گئی تھی۔ ریاستی حکومت نے دوبارہ تقرر کی مدافعت کی۔

TOPPOPULARRECENT