Thursday , August 24 2017
Home / ہندوستان / گجرات میں پاکستان سے 10 دہشت گرد گھسنے کی اطلاعات

گجرات میں پاکستان سے 10 دہشت گرد گھسنے کی اطلاعات

مرکزی وزیرداخلہ راجناتھ نے صورتحال کا جائزہ لیا ، کئی ریاستوں بشمول تلنگانہ کیلئے الرٹ
نئی دہلی ۔ 7 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ نے آج ملک کی داخلی سیکوریٹی صورتحال کا ایسی خفیہ اطلاعات کے تناظر میں جائزہ لیا کہ لشکرطیبہ اور جیش محمد کے 10 مشتبہ دہشت گرد پاکستان سے گجرات کے راستے ہندوستان میں گس چکے ہیں۔ اعلیٰ سطح کی میٹنگ میں جہاں سرکردہ سیکورٹی عہدیدار بشمول معتمد داخلہ راجیو مہریشی اور ڈائرکٹر آف انٹلی جنس بیورو دنیشور شرما شریک ہوئے، راجناتھ نے صورتحال اور کسی بھی ممکنہ دہشت گرد حملے کو روکنے کیلئے اقدامات کا جائزہ لیا۔ سرکاری ذرائع نے کہا کہ وزیرداخلہ کو واقف کرایا گیا کہ چار این ایس جی ٹیموں نے گجرات کے مختلف مقامات پر مورچے سنبھال لئے ہیں اور اگر کوئی ایمرجنسی پیدا ہو تو کسی بھی مقام پر فوری پہنچ سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ راجناتھ نے ان اقدامات کا بھی جائزہ لیا جو گجرات میں کلیدی مقامات، مذہبی جگہوں اور صنعتی مراکز کے علاوہ خطرات کے اندیشے والے میٹرو شہروں میں سیکورٹی میں شدت پیدا کرنے کیلئے کئے گئے ہیں۔ تاہم ابھی تک کوئی سراغ مشتبہ دہشت گردوں کے تعلق سے دستیاب نہیں ہوا ہے جو سمجھا جاتا ہیکہ گجرات میں گھس گئے ہیں، جو ان کا بڑا نشانہ ہوسکتا ہے۔ مرکزی سیکورٹی ایجنسیوں کی جانب سے گجرات اور دیگر بڑے میٹرو پولیٹن سنٹرز کو پہلے ہی ان اطلاعات کے پیش نظر چوکس کردیا گیا ہے کہ 10 دہشت گرد اعلیٰ قدر والے مقامات کے خلاف حملے انجام دینے کیلئے مغربی ریاست میں گھس چکے ہیں۔ اسی طرح کے الرٹ اترپردیش، آندھراپردیش، تلنگانہ، گوا، مدھیہ پردیش، راجستھان اور چندی گڑھ کو بھی بھیجاجاچکا ہے۔ ذرائع نے کہا کہ پٹھان کوٹ فضائی اڈہ میں 2 جنوری کے دہشت گردانہ حملے کے تناظر میں سیکوریٹی ادارے کوئی بھی تساہلی سے گریزاں ہیں اور کوئی بھی ممکنہ دہشت گردانہ حملوں کے تدارک کیلئے تمام ممکنہ اقدامات کئے جارہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT