Thursday , July 27 2017
Home / ہندوستان / گجرات چناؤ کیلئے وی وی پی اے ٹی مشینیں

گجرات چناؤ کیلئے وی وی پی اے ٹی مشینیں

جولائی تک 30 ہزار نئی مشینوں کا حصول: الیکشن کمیشن
نئی دہلی 20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) الیکشن کمیشن جولائی میں 30 ہزار نئی پیپر ٹریل مشینیں حاصل کرے گا جس سے اِس کے موجودہ ذخیرہ میں اِس حد تک اضافہ ہوجائے گا کہ وہ اِن یونٹوں کو گجرات اور ہماچل پردیش میں سال کے اواخر مقررہ اسمبلی انتخابات کے دوران تمام پولنگ اسٹیشنوں میں دستیاب کراسکے گا۔ کمیشن کے ایک عہدیدار نے کہاکہ ہمارے پاس 53,500 وی وی پی اے ٹی مشینیں ہیں۔ آئندہ تین ماہ میں ہم 30 ہزار نئی مشینیں حاصل کریں گے۔ لگ بھگ 84 ہزار یونٹس گجرات اور ہماچل پردیش میں تمام پولنگ اسٹیشنوں میں استعمال کے لئے کافی ہوجائیں گے۔ انتخابی پیانل باضابطہ اعلان کرے گا کہ اِن مشینوں کو مذکورہ بالا دونوں ریاستوں کے تمام مراکز رائے دہی میں استعمال کیا جائے گا جب متعلقہ چناؤ کے پروگرام کا اعلان ہوگا۔ 182 رکنی گجرات اسمبلی کی میعاد آئندہ سال 22 جنوری کو ختم ہورہی ہے، جبکہ 68 رکنی ہماچل پردیش اسمبلی کی میعاد 7 جنوری کو ختم ہوگی۔ ماضی کے انتخابات کو دیکھیں تو اِن ریاستوں میں چناؤ اِس سال ڈسمبر میں منعقد کئے جاسکتے ہیں۔ ووٹر ویری فئیبل پیپر آڈٹ ٹریل (وی وی پی اے ٹی) یونٹ الیکٹرانک ووٹنگ مشین سے مربوط کیا جاتا ہے جس سے رائے دہندے کو یہ تصدیق حاصل کرنے کا موقع ملتا ہے کہ آیا ای وی ایم نے کسی مخصوص امیدوار کو دیئے گئے اُس کے ووٹ کو مناسب طور پر درج کرلیا ہے یا نہیں۔ الیکشن کمیشن کو 2019 ء کے لوک سبھا چناؤ میں تمام پولنگ اسٹیشنوں میں وی وی پی اے ٹی مشینوں کے استعمال کی اجازت دینے کے لئے 16 لاکھ 15 ہزار مزید مشینیں درکار ہیں۔کئی پارٹیوں نے ای وی ایم سے چھیڑ چھاڑ کے شبہات دور کرنے کے لئے اِن مشینوں کے استعمال پر زور دیا ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT