Tuesday , October 17 2017
Home / ہندوستان / گجرات کی لڑکی مغربی بنگال فرار

گجرات کی لڑکی مغربی بنگال فرار

پولیس کے پہنچنے تک بالغ ہوجانے سے قانونی رکاوٹ
مڈنالپور ۔ 15 ۔ جون : ( سیاست ڈاٹ کام ) : ایک مقامی عدالت کی جانب سے گجرات پولیس کو اجازت دینے کے بعد ایک نو عمر لڑکی سورت کے لیے روانہ ہوگئی ۔ جب کہ لڑکی کی عمر مکان سے فراری کے وقت 18 سال مکمل نہیں ہوئی تھی یہ لڑکی اپنے عاشق سے ملاقات کے لیے 6 جون کو سورت ( گجرات ) سے مغربی بنگال کے بیلڈا پہنچ گئی تھی ۔ اس وقت اس کی عمر 18 سال مکمل ہونے کے لیے چند دن باقی تھے ۔ بیلڈا کا یہ نوجوان شیخ شاہ رخ ، سورت میں اس لڑکی کے مکان میں کرایہ دار تھا اور دونوں میں عشق ہوگیا تھا ۔ جسے ہی یہ راز فاش ہوگیا ۔ پلمبر کا کام کاج چھوڑ کر 2 سال قبل نقل مقام کرگیا تھا ۔ تاہم یہ دونوں رابطہ برقرار رکھے ہوئے تھے اور یہ لڑکی 6 جون کو ٹرین میں سوار ہو کر شیخ شاہ رخ سے ملاقات کے لیے بیلڈا پہنچ گئی تھی ۔ والدین نے پولیس میں یہ شکایت درج کروائی ہے کہ ان کی لڑکی نابالغ ہے ۔ اور عاشق کے چکر میں پھنس کر مکان سے فرار ہوگئی ہے ۔ جس پر پولیس کی ایک خصوصی ٹیم بیلڈا پہنچ کر لڑکی کو تحویل میں دینے کی خواہش کی ہے ۔ اگرچیکہ چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ نے لڑکی کو 4 یوم کے لیے ریمانڈ میں دیدیا ۔ لیکن جج سے یہ شکایت کی گئی کہ گجرات پولیس کے ساتھ لیڈی کانسٹبل نہیں ہے تو انہوں نے خاتون کے ساتھ دوبارہ آنے کی ہدایت دی اور اس وقت تک لڑکی کو بالیکا بھون میں رکھا جائے گا ۔ بعد ازاں گجرات پولیس ایک لیڈی کانسٹبل کے ساتھ واپس آئی اور ریمانڈ میں دینے کی گذارش کی ۔ دریں اثناء لڑکی کی عمر 18 سال تک پہنچ گئی اور اسے نابالغ قرار نہیں دیا جاسکتا اور وہ اپنی مرضی سے یہاں آئی ہے تاہم چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ منجو شری منڈل نے کہا کہ جس وقت کیس درج کیا گیا تھا ۔ اس وقت یہ لڑکی نابالغ تھی لہذا 4 دن کے ریمانڈ کی تعمیل کی جائے گی اور آبائی مقام پہنچنے کے بعد یہ لڑکی مجسٹریٹ کے روبرو اپنا بیان قلمبند کروائی ۔ چونکہ اب وہ بالغ ہوگئی ہے لہذا وہ اپنی مرضی کی مالک بن گئی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT